شام پر حملہ سفارتی اور اخلاقی آداب کے بھی منافی اقدام ہے،ساجد علی نقوی

15 اپریل 2018

راولپنڈی (نوائے وقت رپورٹ )قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی نے شام پر امریکہ اور اسکے اتحادیوں کے حملے کی مذمت کرتے ہوئے حملے کے نتیجے میں بڑے پیمانے پر ہونے والے جانی و مالی نقصان پر گہرے دکھ اور تشویش کا اظہار کیا ہے۔ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ منصوبہ بندی کے تحت مختلف حربوں اور منفی و بے بنیاد پروپیگنڈے کو جواز بناکر شام پر حملہ نہ صرف بین الاقو امی قوانین کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے بلکہ سفارتی اور اخلاقی آداب کے بھی منافی اقدام ہے ۔اس حملہ کا مقصد صرف اور صرف غاصب اور غیرقانونی ریاست اسرائیل کو تحفظ فراہم کرکے اس کی تمام رکاوٹوں کو دور کرنا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ اور اتحادی افواج کے حالیہ حملے سے خطہ میں امن و استحکام کو شدید خطرات لاحق ہوگئے ہیں جس کے تدارک کے لئے عالمی امن و انصاف کے ضامن اداروں‘ اقوام متحدہ اور خاص طور پر اسلامی سربراہی تنظیم (اوآئی سی) کو سرجوڑ کر امریکی جارحیت کو روکنے کے لئے فوری ٹھوس و سنجیدہ اقدامات کرنا ہوں گے ۔