سمٹ بنک کے سندھ بنک میں انضمام سے متعلق حکم امتناعی میں توسیع

15 اپریل 2018

کراچی(وقائع نگار)سپریم کورٹ نے سمٹ بنک کے سندھ بنک میں انضمام سے متعلق حکم امتناعی میں توسیع کرتے ہوئے سماعت 5 مئی تک ملتوی کردی۔ عدالت نے ریمارکس دیئے از خود نوٹس ہے فیصلہ چیف جسٹس خود کرینگے۔ سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں سمٹ بنک کے سندھ بنک میں انضمام سے متعلق سماعت ہوئی۔ ڈپٹی گورنر اسٹیٹ بنک جمیل احمد عدالت میں پیش ہوئے۔ ڈپٹی گورنر اسٹیٹ بنک نے بتایا 2 بنکوں کے انضمام پر اسٹیٹ بنک کو کوئی اعتراض نہیں۔ انضمام سے متعلق شفافیت اور قواعد و ضوابط کو مانیٹر کر رہے ہیں۔ جسٹس فیصل عرب نے ریمارکس دیئے سمٹ بنک خسارے میں تھا کیا انضمام سے سندھ بنک پر اثر نہیں پڑیگا۔ جسٹس سجاد علی شاہ نے ریمارکس میں کہا کہ انضمام سے سندھ بنک کو کیا حاصل ہوگا۔ جسٹس فیصل عرب نے استفسار کیا سمٹ بنک کے ملازمین کو تنخواہیں کون دے گا؟ عدالت کو ڈائریکٹر سندھ بنک نے بتایا سمٹ بنک کے ملازمین کو ایک سال تک تنخواہ سندھ بنک ہی دے گا۔ ایک سال بعد سمٹ بنک کے ملازمین دوسری نوکری یا نیا کنٹریکٹ لے سکیں گے۔
سندھ بینک