حج سے متعلق عدالتی فیصلہ جلد آنا چاہئے تاکہ مشکلات کم ہوں‘ سردار یوسف

15 اپریل 2018

حسن ابدال (نامہ نگار) وفاقی وزیر مذہبی امور سردار محمد یوسف نے کہا ہے کہ حکومت چاہتی ہے کہ حج پر عدالتی فیصلہ جلد آئے تاکہ عوام کی مشکلات کا ازالہ ہو ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گوردوارہ سری پنجہ صاحب حسن ابدال میں رسم بھوگ میں شرکت کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ مدارس کی رجسٹریشن پر بہت سے نکات بشمول ، نصاب اصلاحات پر وزارت تعلیم اور مشیر قومی سلامتی کے درمیان کئی معاملات پر اتفاق رائے ہو چکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں 38ہزار مدارس میں 3.5ملین بچے پڑھتے ہیں ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ لیاقت نہرو معاہدے کی پاکستان پوری طرح پاسداری کر رہا ہے تاہم بھارت پاکستانی زائرین کو ویزے فراہم نہیں کر رہاجو کہ قابل مذمت ہے اس سے قبل گوردوارہ پنجہ صاحب میں میلہ بیساکھی کی اختتامی رسم بھوگ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان میں اقلیتوں کو مساوی حقوق اور مکمل مذہبی آزادی حاصل ہے پاکستان میں ان کے تمام تہوار سرکاری سرپرستی میں منائے جاتے ہیں۔ ۔ انہو ںنے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 2019ء میں بابا گرو نانک کی 550ویں برسی کے موقع پر پاکستان دنیا بھر سے 20ہزار سے زائد سکھ یاتریوں کو شرکت کی دعوت دے گا۔ تقریب سے متروکہ وقف املاک بورڈ کے سیکرٹری طارق خان وزیر، پاکستان سکھ گوردوارہ پربندھک کمیٹی کے صدر سردار تارا سنگھ اور دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔
سردار یوسف