انتخابی شیڈول کا اعلان ہوئے 3ہفتے گزر گئے، پی پی پی کوئی بڑا جلسہ نہ کر سکی

15 اپریل 2013

 اسلام آ باد( سجاد ترین ،خبر نگار خصو صی )ہر گھر سے بھٹو نکلے گا کا نعرہ لگانے والی جماعت کے لیڈر اپنے اپنے گھروں میں بند ہو گے ہیں انتحابات میں 26 روز باقی رہ گے ہیں اور کوئی لیڈر گھر سے باہر نہیں آرہا۔ رحمن ملک کی اس موقع پر خا موشی سوالیہ نشان بن رہی ہے وفا قی دارالحکو مت کے سیاسی حلقوں میں پیپلز پارٹی کی جا نب سے ملک بھر میں انتحابی مہم شروع نہ کرنے پر مختلف چہ مگوئیاں ہورہی ہیں پیپلز پارٹی کے کارکن بھی خاموشی توڑنے کے لیے تیار نہیں۔ پیپلزپارٹی کے کارکنوں کا موقف ہے کہ 5 سالہ اقتدار میں وزیروں اور دو نوں وزرائے اعظم نے پارٹی کارکنوں کو دور رکھا تھا اب کارکن ان کی انتحابی مہم چلانے کے لیے تیار نہیں دونوں وزرائے اعظم اپنے اپنے خاندان کے لوگوں کو اہمیت دیتے رہے وزرا کا بھی یہی حال رہا ہے پیپلزپارٹی کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ انتحا بی شیڈول کا اعلان ہوئے تین ہفتے سے زیادہ وقت گذر گیا ہے مگر پیپلزپارٹی کوئی بڑا جلسہ نہیں کر سکی دہشتگردی کے خوف کا بہانہ بنا کر خاموشی کا جواز پیش کیا جارہا ہے وفاقی دارالحکو مت کے حلقہ49 میں پیپلزپارٹی کے امیدوار مصطفٰی نواز کھو کھر، اور این اے 54 میں ز مرد خان نے اپنی انتحابی مہم جنگی بنیادوں پر شروع کر رکھی ہے مگر باقی راولپنڈی ڈویژن میں کوئی امیدوار اس انداز میں مہم نہیں چلا رہا پیپلز پارٹی کے اکثر امیدوار ہارے ہوئے جرنیل کی طر ح نیم دلی سے انتحابی مہم چلا رہے ہیں۔ پیپلز پارٹی کی انتحابی مہم کا کوئی رنگ نہیں بن رہا ہے وسطی پنجاب میں پیپلز پارٹی کے امیدواروں کے چہرے اترے ہوئے ہیں 5 سالہ اقتدار کے سورج میں چمکنے والے ورزاءکی اکثر یت خرابی صحت کا سہارا لے کر بیرون ملک جانے کی منصو بہ بندی بنا رہے ہیں اقتدار کے دنوں میں روزانہ میڈیا پر اپوزیشن کو للکار نے والے اب سیاست کے میدان سے غا ئب ہوچکے ہیں۔