پنجاب حکومت کے ترقیاتی منصوبے اشتہارات تک محدود رہے، تنویر کائرہ

15 اپریل 2013

لاہور (خبر نگار)پاکستان پیپلز پارٹی پنجاب کے جنرل سیکرٹری تنویر اشرف کائرہ نے کہا ہے کہ میاں شہباز شریف کی دور رس پالیسوں کے نتائج آنا شروع ہو گئے ہیں۔لاہور میں گزشتہ شب چار بچوں کی خسرہ جیسی بیماری سے ہلاکت میاں شہباز شریف کی پالیسی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔انہوں نے کہا۔ پنجاب حکومت کی ساری ترقی کامیابی صرف اشتہاروں تک محدود رہی دوسری طرف نقصان پنجاب حکومت کو شہباز شریف کے دور میں پہنچا اس کی کوئی مثال نہیں ملتی ۔ انہوں نے کہاشو باز چیف منسٹر کے پانچ سالہ دور میں ایمرجنسی میں کسی غریب کو پانچ روپے کی دوائی بھی مفت نہیں میسر ہوئی۔ انہوں نے کہا شو باز شہباز شریف نے پانچ سال میں وفاق کو نشانہ بنانے اور جھوٹے پراپیگنڈے کے علاوہ کچھ نہیںکیا، خسرہ جیسی بیماری سے پنجاب میں آج کے جدید دور میں کمسن بچوں کی ہلاکتیں " شوباز" شریف کی شوباز پالیسیوں کا نتیجہ ہیں -پیپلز سیکرٹریٹ میں پارٹی اجلاس کے دوران پیپلز پارٹی کے رہنماﺅں نے کہاکہ ن لیگ پنجاب حکومت نے اپنے پانچ سالہ دور حکومت میں وفاقی حکومت سے ملنے والے 2500 ارب روپے اپنے اللے تللوں ، سستی روٹی سکیم ، آشیانہ ہاﺅسنگ سکیم ، دانش سکول ، لیپ ٹاپ اور 70 ارب روپے جنگلہ بس سروس پر خرچ کر کے غریب عوام کو ہسپتالوں میں ایڑیاں رگڑ رگڑ کر مرنے پر مجبور کر دیا ۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب کو وفاق سے 576 ارب روپے کے فنڈ ملے مگر بدقسمتی سے یہاں پر موجود وزیر اعلی شو باز شریف نے سستی شہرت کے لئے سارا پیسہ لاہور کی سڑکوں اور پلوں پر پانی کی طرح بہا کر ضائع کر دیا ۔ انہوں نے کہا کہ آج اگر لاکھوں بچے بغیر چھتوں اور دیواروں کے سکولوں میں پڑھنے پر مجبور ہیں اور لاہور سمیت پورے پنجاب کے ہسپتالوں میں بچے خسرہ جیسی بیماریوں سے مر رہے ہیں۔ تو اس کی اصل وجہ یہ ہے کہ شہباز حکومت نے صوبے میں فلاحی شعبوں کے لئے آٹے میں نمک کے برابر فنڈ مختص کئے آج لوگوں کو ہسپتالوں میں ادویات تک میسر نہیں ہیں ۔