ایرانی ڈیزل کی اسمگلنگ میں پولیس ملوث ہے: چیئرمین اینٹی کرپشن

14 اکتوبر 2016 (15:09)

کراچی:چیئرمین اینٹی کرپشن سندھ غلام قادر تھیبو نے کہا ہے کہ سندھ بھر میں ایرانی ڈیزل کی غیرقانونی اسمگلنگ سندھ پولیس کی مدد سے کی جاری ہے. 2روز قبل اینٹی کرپشن ٹیم نے منگھوپیر کے علاقے میں خفیہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے 2ملزمان کو گرفتار کرکے 4500 ایرانی ڈیزل برآمد کیا۔دوران تفتیش ملزمان نے اہم انکشافات کیے ہیں جبکہ دوران تفتیش پولیس کے اعلیٰ افسران کے نام بھی ایرانی ڈیزل اسمگلنگ میں سامنے آئے ہیں جن کو فوری گرفتارکیاجائے گا، اپنے دفتر میں ایکسپریس سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے غلام قادر تھیبو نے مزید کہا کہ محکمہ اینٹی کرپشن اب نیب اختیارات کی طرح کارروائیاں شروع کرے گا جبکہ کہ سندھ میں 2 ڈائریکٹر جنرل تعینات کیے جارہے ہیں۔وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی خاص ہدایت پر اینٹی کرپشن کو سندھ بھر میں کرپشن کے خاتمے کے لیے متحرک کیا گیا ہے. ان کا کہنا تھا کہ اگر عام سرکاری ملازم کے ساتھ کوئی سیاسی رہنما بھی کسی کرپشن میں ملوث پایا گیاتواسے بھی گرفتارکیاجائے گا. موجودہ حکومت کا عزم ہے کہ سندھ میں کرپشن کی روک تھام کے لیے بغیر کسی سیاسی یا حکومتی دباﺅ کے کرپٹ افسران کے خلاف کارروائیاں تیز کیں جائیں۔ایک سوال کے جواب میں چیئرمین اینٹی کرپشن نے کہا کہ کراچی انٹربورڈ نتائج ردوبدل اسکینڈل میں ملوث کرپٹ افسران کے خلاف کارروائی کے بعد کچھ دن قبل جاری کردہ نتائج میں بڑی تبدیلی دیکھنے میں آئی ہے جس میں پہلی بار کسی غریب کے بیٹے یا بیٹی نے پوزیشن حاصل کی ہے.یہ سلسلہ اب سندھ بھر کے تعلیمی بورڈز میں جاری رہے گا۔