نیشنل ایکشن پلان‘ کوئی ابہام نہیں‘ تمام نکات پر عملدرآمد تیز کیا جائے : نوازشریف

14 اکتوبر 2016

اسلام آباد (وقائع نگار خصوصی+ ایجنسیاں) وزیراعظم نواز شریف نے محرم میں امن و امان کی صورتحال برقرار ر کھنے پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کے حوالے سے کسی سطح پر کوئی ابہام نہیں۔ دہشتگردی کیخلاف جنگ کو منطقی انجام تک پہنچانے کیلئے عسکری و سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے۔ حکومت اور اداروں میں غلط فہمیاں پیدا کرنے کی کوششیں ناقابل قبول ہیں، وزیراعظم نے نیشنل ایکشن پلان کے تمام نکات پر عملدرآمد تیز کرنے کی بھی ہدایت کی۔ ان خیالات کا اظہار وزیراعظم نے آذربائیجان کے تین روزہ دورے پر روانگی سے قبل ائیر پورٹ پر امن و امان کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کے دوران خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں وزیر داخلہ چودھری نثار، چیف سیکرٹری، آئی جی پنجاب سمیت دیگر اعلی حکام نے شرکت کی۔ اجلاس میں اندرونی سکیورٹی اور نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کا بھی جائزہ لیا گیا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ سکیورٹی خطرات اندرونی ہوں یا بیرونی اب کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا۔ شرکاءنے امن و امان کی صورت حال اور عاشور کے موقع پر امن و امان پر اظہار خیال کے علاوہ اندرونی سکیورٹی اور نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کا بھی جائزہ لیا۔ وزیر داخلہ نے وزیراعظم کو ملک کی سیاسی، داخلی اور امن وامان کی صورتحال پر بریفنگ دی۔ آذر بائیجان پہنچنے پر ائیر پورٹ پر میزبان ملک کے ڈپٹی وزیراعظم اور دیگر اہم عہدیداروں نے وزیراعظم کا پرتپاک استقبال کیا۔ بچوں نے وزیراعظم اور خاتون اول بیگم کلثوم نواز کو گلدستے پیش کیے۔ نواز شریف آذر بائیجان کے صدر اور وزیراعظم سے ملاقاتیں کریں گے۔ جس میں علاقائی، عالمی سلامتی اور خطے کی صورتحال پر بات چیت کی جائے گی۔ پاکستان اور آذربائیجان میں اقتصادی، تجارتی اور سرمایہ کے شعبے میں تعاون پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ دونوں ممالک کے درمیان زراعت، صنعت، ٹیکسٹائل سمیت مختلف معاہدوں پر دستخط ہوں گے۔ ترجمان وزیراعظم کے مطابق وزیراعظم محمد نواز شریف کو دورہ کی دعوت آذربائیجان کے صدر الہام علیوف نے دی تھی، جبکہ وزیراعظم نوازشریف کا آذر بائیجان کا یہ پہلا دورہ ہے۔ ترجمان کے مطابق دورہ آذربائیجان ہمسایہ اور علاقائی ممالک سے پاکستان کے تعلقات کو فروغ دینے کیلئے اور انہیں مستحکم کرنے کے لئے وزیراعظم کے وژن کا عکاس ہے۔ پاکستان اور آذربائیجان کے درمیان مشترکہ تاریخی، ثقافتی اور مذہبی تعاون پر مبنی تعلقات سمیت اہم علاقائی اور عالمی امور پر بھی یکساں نقطہ نظر ہے، دونوں ممالک اقوام متحدہ، اسلامی تعاون تنظیم اور اقتصادی تعاون تنظیم میں ایک دوسرے کے معاون ہیں، روانگی سے قبل امن و امان کی صورتحال پر اجلاس کے موقع پر وزیراعظم کا کہنا تھا کہ وہ وقت دور نہیں جب قوم دشمنوں کے پھیلائے ہر پروپیگنڈا کو حرفِ غلط کی طرح مٹا دے گی۔ پاکستان کے شہری تعصبات سے بلند ہو کر عالم اقوام میں مثالی نام بنائیں گے۔ ملاقات کے دوران وزیراعظم اور وزیر داخلہ نے ملک میں امن کی صورتحال پر اطمینان کا اظہار کیا انہوں نے وزیراعظم سے اہم امور پر مشاورت کی۔ ملاقات کے دوران 10 محرم الحرام کو ملک بھر میں سکیورٹی کی صورتحال پر مکمل اطمینان کا اظہار کیا گیا۔

نواز شریف