قائد اعظم

14 اکتوبر 2016

میں ان جاگیرداروں اور سرمایہ داروں کو خبردار کرنا چاہتا ہوں جو ہمیں نقصان پہنچا کر پھلے پھولے ہیں۔ ایک ایسے نظام کے تحت جو اس درجہ خباثت سے پُر اور موذی ہے اور جس نے انہیں اس قدر خودغرض بنا دیا ہے کہ انہیں قائل کرنا بھی مشکل ہو گیا ہے۔ عوام کا استحصال کرنا ان کے خون میں داخل ہو چکا ہے۔ یہ اسلام کی تعلیمات کو فراموش کر چکے ہیں۔
(صدارتی خطبہ آل انڈیا مسلم لیگ، دہلی۔ 24اپریل 1943ئ)

قائد اعظم

حضورؐ نے نہ صرف اپنے الفاظ سے بلکہ اپنے عمل کے ذریعے یہودیوں اور عیسائیوں کے ...