بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب وہ کار حادثے کے نتیجے میں شدید زخمی ہو گئیں پاکستان ویمن فٹبال ٹیم کی سٹرائیکر شہلائلہ بلوچ کار حادثے میں جاں بحق

14 اکتوبر 2016
 بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب وہ کار حادثے کے نتیجے میں شدید زخمی ہو گئیں پاکستان ویمن فٹبال ٹیم کی سٹرائیکر شہلائلہ بلوچ کار حادثے میں جاں بحق

لاہور (سپورٹس رپورٹر+نمائندہ سپورٹس) پاکستانی خواتین فٹبال ٹیم کی کھلاڑی شہلائلہ بلوچ کار حادثے میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہو گئیں۔ کراچی ڈیفنس فیز 8 میں بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب وہ کار حادثے کے نتیجے میں شدید زخمی ہو گئیں۔ شہلائلہ بلوچ کو شدید زخمی حالت میں ہسپتال لے جایا گیا جہاں وہ زندگی کی بازی ہار گئی۔ 20 سالہ شہلائلہ پاکستان ویمن فٹبال ٹیم اور بلوچستان کی صوبائی ویمن فٹبال ٹیم کی سٹرائیکر کھلاڑی تھیں۔ انہوں نے سا¶تھ ایشین فٹبال فیڈریشن ویمن چیمپئن شپ 2014ءمیں پاکستان کی نمائندگی بھی کی تھی۔ شہلائلہ بلوچ کی والدہ روبینہ عرفان سابق سینیٹر بھی رہ چکی ہیں۔ مرحومہ کے انتقال پر پاکستان فٹبال فیڈریشن کے صدر فیصل صالح حیات، سیکرٹری کرنل (ر) احمد یار لودھی، ڈائریکٹر جنرل سپورٹس پنجاب ذوالفقار احمد گھمن نے شہلائلہ بلوچ کی ٹریفک حادثہ میں وفات پر گہرے دکھ ور نج کا اظہار کیا ہے۔ شہلائلہ نے 7سال کی عمر میں فیفا کی کم عمر کھلاڑی ہونے کا اعزاز حاصل کیا۔ لاہور سے اےن اےن آئی کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے ٹریفک حادثے میں پاکستان ویمنز فٹ بال ٹیم کی کھلاڑی شہلائلا بلوچ کے جاں بحق ہونے پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ وزیراعلیٰ نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہا کہ شہلائلا بلوچ پاکستان ویمنز فٹ بال ٹیم کی بلاصلاحیت کھلاڑی تھیں، ان کے انتقال سے ویمنز ٹیم بہترین کھلاڑی محروم ہو گئی ہے۔ وزیراعلیٰ نے غمزدہ خاندان سے ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے دعا کی ہے کہ اللہ تعالیٰ مرحومہ کی روح کو جوار رحمت میں جگہ دے اور سوگوار خاندان کو صبر جمیل عطا فرمائے۔

شہلائلہ جاں بحق