چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے پانامہ لیکس تین رکنی فل بنچ تشکیل دے دیا

14 اکتوبر 2016

لاہور(وقائع نگار خصوصی) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے پانامہ لیکس کے معاملے پروزیر اعظم نواز شریف کےخلاف نیب میں انکوائری کی درخواست پر سماعت کے لئے مسٹرجسٹس شمس محمود مرزا کی سربراہی میں تین رکنی فل بنچ تشکیل دے دیا۔ فل بنچ آئندہ ہفتے سے کیس کی سماعت کا آغاز کرئے گا۔ بنچ کے دیگر ممبران میں مسٹر جسٹس شہبازرضوی اور مسٹرجسٹس مرزا وقاص احمد رﺅف شامل ہیں۔ درخواست محمد اظہر صدیق ایڈوکیٹ کے توسط سے دائر کی گئی تھی ۔ جس میں کہا گیا کہ وزیراعظم اور ان کے خاندان کے افرادنے اثاثے چھپائے اور رقم غیرقانونی طور پر بیرون ملک منتقل کی۔ اور قوم سے غلط بیانی کی۔ نیب آرڈیننس کے سیکشن 18کے تحت وزیر اعظم کے خلاف پانامہ لیکس کے معاملے پر نیب از خود کاروائی کا اختیار رکھتا ہے لیکن نیب نے انکوائری شروع نہیں کی جو کہ عدالتی احکامات اورقوانین کی خلاف ورزی ہے لہذا عدالت ڈی جی نیب پنجاب کو کام سے روکنے کے احکامات صادر کرے۔جس پر عدالت نے فریقین کے وکلاءکو مزید دلائل کے لئے طلب کرتے ہوئے اسی نوعیت کے تمام کیسز کوعدالت کے روبرو پیش کرنے کی ہدائت کرتے ہوئے مزید سماعت 27اکتوبر تک ملتوی کر دی۔
فل بنچ تشکیل