کراچی میں فائرنگ تشدد پولیس افسر سمیت 5 افراد ہلاک 2 زخمی

14 اکتوبر 2016

کراچی (کرائم رپورٹر) کراچی کے مختلف علاقوں میں تشدد اور فائرنگ کے واقعات میں پولیس افسر سمیت 5 افراد ہلاک اور کمسن بچے سمیت دو افراد زخمی ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق عیدگاہ کے علاقے میں کے ایم سی ورکشاپ کے نزدیک مسلح ملزمان نے ایک شخص39 سالہ محمد اسلم ولد عبدالغنی کو فائرنگ کرکے ہلاک کردیا اور فرار ہوگئے۔ مقتول اسلم کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ وہ مل والی بلڈنگ میں رہتا اور محنت مزدوری کرتا تھا پولیس کا کہنا ہے کہ اس کا قتل ڈکیتی میں مزاحمت کا نتیجہ ہے۔ جبکہ اے ایس آئی شہزاد کورنگی میں نامعلمو افراد کی فائرنگ کا نشانہ بنا۔ ادھر گلبہار کے علاقے میں لیاری ندی سے ایک شخص کی لاش ملی جسے تشدد اور گولیاں مار کر ہلاک کیا گیا تھا پولیس کے مطابق مقتول کی عمر تقریباً40 سال تھی اور اس نے پینٹ شرٹ پہن رکھی تھی تاہم فوری طور پر مقتول کی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔ گلشن معمار میں فضل مل کے قریب سے بھی ایک شخص کی لاش ملی جسے تشدد کرکے ہلاک کیا گیا تھا پولیس کا کہنا ہے کہ60 سالہ اس شخص کی بھی شناخت نہیں ہوسکی ہے اور اس بارے میں تفتیش جاری ہے دریں اثناءسہراب گوٹھ کے علاقے مچھر کالونی میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے کمسن بچہ8 سالہ علی محمد ولد گل خان اور ایک شخص50 سالہ محمد داﺅد ولد نذر محمد زخمی ہوگئے۔ اس کے علاوہ ماری پور کے علاقے مشرف کالونی میں مسلح افراد کی فائرنگ سے ایک شخص اسمعیٰل ولد عبدالقیوم ہلاک ہوگیا۔
کراچی فائرنگ

آئین سے زیادتی

چلو ایک دن آئین سے سنگین زیادتی کے ملزم کو بھی چار بار نہیں تو ایک بار سزائے ...