عمران فاروق کیس کا ٹرائل جلد مکمل کرنے کی درخواست پروزارت داخلہ کو نوٹس

14 اکتوبر 2016

اسلام آباد ( وقائع نگار) اسلام آباد ہائی کورٹ نے ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس کا ٹرائل جلد مکمل کرنے کی درخواست پر وزارت داخلہ اور ڈی جی ایف آئی اے کو نوٹس جاری کرتے ہوئے دو ہفتوں میں جواب طلب کر لیا ہے ۔عدالت عالےہ کے جسٹس نورالحق قریشی اور جسٹس اطہر من اللہ پر مشتمل دو رکنی بنچ نے ڈاکٹر عمران فاروق کے قتل کے الزام میں گرفتار ملزم معظم علی کی اہلیہ سعدیہ بانو کی درخواست پرسماعت کی۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ دسمبر 2015 سے ٹرائل التواکا شکار ہے۔ ایف آئی اے آج تک ایک بھی گواہ عدالت میں پیش نہیں کرسکی جبکہ پراسیکیوٹر کی عدم تعینانی کے باعث کیس اسلام آباد سے کراچی منتقلی کی درخواست بھی التواءکا شکار ہے۔ عدالت ٹرائل کورٹ کو روزانہ کی بنیاد پر سماعت کرمتفرق درخواتیںنمٹانے اور ٹرائل جلد مکمل کرنے کا حکم دے۔ عدالت نے وزارت داخلہ، ڈی جی ایف آئی اے سمیت تمام فریقین سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کردی۔
عمران فاروق کیس