پاکستان، بھارت کو پسندیدہ ترین قرار دینے کے حوالے سے کشمکش کا شکار ہے: بھارتی اخبار

14 نومبر 2013

 نئی دہلی (آئی این پی) بھارتی میڈیا نے کہا ہے کہ بھارت پاکستان کی جانب سے تجارت کے لیے پسندیدہ ترین ملک کا درجہ حاصل کرنے کے حوالے سے عجیب کشمکش کا شکار ہے۔ ایک سال کے انتظار کے باوجود وزیراعظم نواز شریف  کے مشیر امور خارجہ سرتاج عزیز نے حالیہ دورہ نئی دہلی میں بھارت کو پسندیدہ ترین ملک قرار دینے کی کوئی یقین دہانی نہیں کرائی۔ بھارتی اخبار  بزنس سٹینڈرڈ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ  سرتاج عزیز نے وزیرخارجہ سلمان خورشید اور وزیراعظم من موہن سنگھ سے اہم ملاقاتیں بھی کیں  جن کے دوران تجارتی تعلقات اور اقتصادی معاملات سمیت مختلف امور پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا تاہم ان کی طرف سے بھارت کو تجارت کے لیے پسندیدہ ترین ملک کا درجہ دینے کی کوئی یقین دہانی نہیں کرائی گئی۔ دسمبر 2012  میں پاکستان نے وعدہ کیا تھا کہ وہ دو طرفہ تعلقات کو معمول پر لانے کے لیے بھارت کو پسندیدہ ترین ملک کا درجہ دے گا لیکن ایک سال کے انتظار کے باوجود بھی کوئی نتیجہ نہیں نکل سکا  بھارت اس کشمکش کا شکار ہے کہ اسے پاکستان کی طرف سے موسٹ فیورٹ  نیشن کا درجہ ملے گا یا نہیں حالانکہ ورلڈ بینک کی حالیہ سٹڈی میں کہا گیا ے کہ بھارت کو ایم ایف این کا درجہ دینے سے پاکستان کو بہت فائدہ ہو گا۔ رپورٹ میں کہا گیا  ہے کہ پاکستان بھارت کے ساتھ تعلقات بہتر کرنے کے دعوے کرتا ہے تاہم اس سلسلے میں کوئی عملی قدم نہیں اٹھاتا۔