پرویز مشرف رہا ہوئے تو ان کے سر کی قیمت میں اضافہ کر دوں گا: طلال بگٹی

14 نومبر 2013

 اسلام آباد (آن لائن) جمہوری وطن پارٹی کے صدر طلال بگٹی نے کہا ہے کہ پرویز مشرف رہا ہوئے تو ان کے سر کی قیمت میں اضافہ کر دوں گا، بلوچستان ٹوٹا تو پاکستان کو خطرات لاحق ہو جائیں گے، مری اور بگٹی قبائل کے علاوہ تمام بلوچ انگریز کے تابعدار ہیں۔ نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا سابق صدر پرویز مشرف رہا ہوئے تو ان کے سر کی قیمت بڑھا دوں گا، وزیراعظم نوازشریف سے پرویز مشرف کی حوالگی کا مطالبہ کروں گا، بلوچستان میں بیرونی مداخلت جاری ہے اور ہر روز لوگوں کو اغوا کیا جاتا ہے، اگر بلوچستان میں نوگو ایریاز ختم نہ ہوئے تو امن قائم نہیں ہو گا، بلوچستان میں بیرونی مداخلت نہ رکی تو پاکستان کے ٹوٹنے کے خطرات لاحق ہو سکتے ہیں۔ میرے خاندان کے تین افراد ہیں اور ان کی حفاظت کیلئے 45 سکیورٹی والے ہوتے ہیں، سپریم کورٹ میں پٹیشن دائر کروں گا، سیاسی جماعتوں کے مسلح ونگ بنانے کی اجازت لوں گا۔ پاکستان اور ایران کا گیس پائپ لائن معاہدہ ختم ہوتا نظر آ رہا ہے، مری اور بگٹی قبائل کے علاوہ تمام بلوچ رہنما انگزیز حکومتوں کے تابعدار ہیں۔ وزیر اعلیٰ بلوچستان عبدالمالک کے وزیر اعلیٰ بننے سے بلوچستان میں امن قائم نہیں ہو گا، وہ کمزور آدمی ہیں، بلوچستان میں امن کیلئے وفاق کو کڑوے فیصلے کرنا پڑیں گے۔ مسلم لیگ (ن) کی حکومت صحیح سمت میں جا رہی ہے۔ امید ہے وزیراعظم نوازشریف سابقہ دور کی تمام غلطیاں بھلا کر پاکستان کے بہتر مستقبل کیلئے اچھے فیصلے کریں گے۔ انہوں نے وزیراعظم نوازشریف سے مطالبہ کیا اڑھائی لاکھ بگٹی غیرآباد ہیں، وزیراعظم ان کے مسئلے کو حل کریں اور بلوچستان سمیت پاکستان میں امن کے لئے تمام سیاسی جماعتوں کو متحد کریں اور پارلیمنٹ میں ملکی سطح کے فیصلے کریں۔