شہدائے کربلا مسلمانوں کے اصل ہیرو ہیں، ایوان کارکنان میں خراج عقیدت

14 نومبر 2013

لاہور (خصوصی رپورٹر) حضرت امام حسینؓ نے میدان کربلا میں اسلام کی عزت وبقاء کیلئے اپنی اور اپنے خاندان والوں کی جانوں کا نذرانہ پیش کیا۔ واقعہ کربلا ہمیں ہمیشہ حق کا ساتھ دینے اور اس راہ میں آنیوالی تمام رکاوٹوں کو برداشت کرنے کادرس دیتا ہے۔ شہدائے کربلا مسلمانوں کے اصل ہیرو ہیں جنہوں نے اپنی جانیں قربان کرکے دین اسلام کو زندہ رکھا۔  ان خیالات کا اظہار مقررین نے ایوان کارکنان تحریک پاکستان، شاہراہ قائداعظمؒ لاہور میں  منعقدہ خصوصی نشست بعنوان ’’فلسفۂ شہادت سید الشہداء حضرت امام حسینؓ‘‘ کے دوران کیا۔ اس نشست کا اہتمام نظریۂ پاکستان ٹرسٹ نے تحریک پاکستان ورکرزٹرسٹ کے اشتراک سے کیا تھا۔ نشست کا باقاعدہ آغاز تلاوت کلام پاک ، نعت رسول مقبولﷺ اور قومی ترانہ سے ہوا۔ قاری محمد سعید نے تلاوت کلام پاک کی سعادت حاصل کی جبکہ قاری محمد صادق نے بارگاہ رسالت مابؐ میں ہدیۂ عقیدت پیش کیا۔ نشست کی نظامت کے فرائض سید عابد حسین شاہ نے انجام دیے۔ خطیب بادشاہی مسجد مولانا عبدالخبیر آزاد نے کہا کہ ڈاکٹر مجید نظامی کی قیادت میں نظریۂ پاکستان ٹرسٹ لوگوں تک محبت اور بھائی چارے کا جوپیغام پہنچا رہا ہے وہ قابل ستائش ہے۔ حضرت امام حسینؓ کسی خاص مسلک یا فرقہ کے نہیں بلکہ سب کے ہیں۔ ہمیں قرآن پاک کی اس آیت پر عمل کرنا چاہئے کہ اللہ کی رسی کو مضبوطی سے تھام لو اور تفرقہ میں نہ پڑو۔ جمعیت علمائے پاکستان کے رہنما قاری زوار بہادر نے کہا کہ واقعہ کربلا ہمیں صبرواستقامت کا درس دیتا ہے۔ ہمیں اس جذبے کو زندہ کرنے کی ضرورت ہے۔ جامعہ نعیمیہ لاہور کے ناظم اعلیٰ علامہ ڈاکٹر راغب حسین نعیمی نے کہاکہ حضرت امام حسینؓ نے اللہ تعالیٰ کی راہ میں اپنا سب کچھ قربان کر دیا۔ یہ بات یاد رکھیں کہ حسینیت کا کردار ہمیشہ فتح یاب رہے گا اور یزیدیت کو شکست ہو گی۔ شیخ الحدیث جامعہ اشرفیہ لاہور مولانا محمد یوسف نے کہا کہ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ ڈاکٹر مجید نظامی کی قیادت میں نئی نسل کواس وطن کی خاطر دی جانیوالی قربانیوں سے آگاہ کرنے کے ساتھ ساتھ دین اسلام کے بقاء کیلئے دی جانیوالی قربانیوں سے بھی آگاہ کررہا ہے۔ قرآن پاک میں ارشاد باری تعالیٰ ہے کہ شہداء کو مردہ مت کہو بلکہ وہ زندہ ہیں لیکن تمہیں اس کا شعور نہیں ہے۔ آج ہمیں اتحاد و اتفاق کی اشد ضرورت ہے۔ پیرسید معصوم حسین نقوی نے کہا کہ ہماری بہادر افواج وطن کی حفاظت کیلئے بیش بہا قربانیاں دے رہی ہیں۔ نظریۂ پاکستان فورم میرپور (آزادکشمیر)کے صدر مولانا محمد شفیع جوش نے کہا کہ حضرت امام حسینؓ نے کربلا کے میدان میں جانوں کا نذرانہ پیش کر دیا لیکن دین اسلام پر آنچ نہ آنے دی۔ نظریۂ پاکستان ٹرسٹ کے سیکرٹری شاہد رشید نے کہا کہ  پاکستان میںاسلام دشمن قوتیں دہشتگردی کو فروغ دے رہی ہیں،آج ضرورت اس امر کی ہے کہ ہم متحد ہو کر اسلام دشمن عناصر کے عزائم ناکام بنا دیں۔ حضرت امام حسینؓ نے بھی امت کو اتحاد کادرس دیا۔سید عابد حسین شاہ نے کہا کہ حضرت امام حسینؓ نے عزم واستقلال اورصبر و استقامت سے قربانی کی جوعظیم مثال قائم کی وہ ہمارے لیے مشعل راہ ہے۔ پروگرام کے آخر میں شرکاء نے حضرت امام حسینؓ کے حضور سلام کا نذرانہ پیش کیا جبکہ قاری زوار بہادر نے دعا کرائی۔