محکمہ صحت کے عملے نے ایتھوپیا سے آنیوالے 7 اعلیٰ افسران کو ڈیپورٹ کر دیا

14 نومبر 2013

لاہور (خبر نگار) لاہور ائرپورٹ پر تعینات وفاقی محکمہ صحت کے عملے نے ایتھوپیا سے ایک بین الاقوامی کانفرنس میں شرکت کیلئے آنیوالے 7 اعلیٰ افسران کو ڈیپورٹ کرا دیا۔ ایتھوپیا حکومت کی شکایت پر وزارت خارجہ نے وزارت داخلہ سے جواب مانگ لیا۔ ذرائع کے مطابق ایتھوپیا کے 7 اعلیٰ افسران عبدالمالک یبکر، مسز شکریہ احمد، محی الدین احمد، ایوب عبدل الٰہی، سکندر عبدالرحمن، عبدالناصر ادریس، یاسمین زکریا منگل کو پاکستان پہنچے۔ امیگریشن کلیئرنس کے بعد محکمہ صحت کے افسران نے ان سے ’’ییلو فیور‘‘ کے ٹیکے لگوانے کے ثبوت مانگے تو انہوں نے بتایا کہ پاکستان آنے سے پہلے ییلو فیور کی ویکسین نہیں لگوائی۔ انہیں کہا گیا کہ پاکستان داخلے کی اجازت تب ملے گی جب وہ ’’ییلو فیور‘‘ ویکسین لگوائیں گے اور 5 دن ’’قرنطینہ‘‘ میں انڈر آبزرویشن رکھا جائے گا جس پر ایتھوپین افسران نے کہا کہ وہ صرف 4 دن کیلئے پاکستان آئے ہیں، اگر 5 دن ’’قرنطینہ‘‘ میں رکھنا ضروری ہے تو انہیں واپس ایتھوپیا بھجوا دیا جائے جس پر انہیں ڈیپورٹ کر دیا گیا۔ ایتھوپیا پہنچنے پر انہوں نے اپنی حکومت سے اپنے ساتھ روا رکھے گئے سلوک کی شکایت کی۔