گندم، شوگر پالیسی کا اعلان نہ کرنے پر کسان بورڈ کا ہڑتال کا فیصلہ

14 نومبر 2013

 حافظ آباد(نمائندہ نوا ئے وقت)کسان بورڈ پاکستان کے مرکزی صدر سردار ظفر حسین نے کہا ہے کہ زراعت ملکی معیشت کی ریڑھ کی ہڈی ہے جسے کمزور کر کے حکومت ملکی معیشت کو زبردست بحران سے دوچار کر رہی ہے۔ وہ کسان بورڈ کے ضلعی صدر امان اللہ چٹھہ کی زیر صدارت ایک اجلاس میں مہمان خصوصی کے طور پر خطاب کر رہے تھے۔ جس سے ملک شوکت علی پھلروان، رائے محمد نواز، میاں عمر حیات اور مہر شفقت نے بھی خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ گندم کی بوائی اور گنا کی کٹائی کا سیزن گزر رہا ہے لیکن ابھی تک حکومت نے گندم اور شوگر پالیسی کا اعلان کرنے کی ضرورت محسوس نہیں کی۔ جس کے خلاف کسان 20نومبر کو ملک گیر احتجاج کریں گے۔ انہوں نے واضع کہا کہ کھاد ، تیل ،بجلی کی قیمتوںمیں ہوشربا اضافہ کو روکا گیا ہے۔ نہ گندم اور گنا کی قیمتوں کو منصفانہ سطح پر لایا جا رہا ہے۔ جس کے نتیجہ میں غلہ اور چینی کی آئندہ سیزن کی پیداوار میں زبردست کمی اور درآمد کی مجبوری لاحق ہونے کا شدید خطرہ پیدا ہو چکا ہے۔