ارمغانِ حجاز

14 نومبر 2013

تقدیرِ اُمم کیا ہے‘ کوئی کہہ نہیں سکتا
مومن کی فراست ہو تو کافی ہے اشارا
اخلاصِ عمل مانگ نیاگانِ کُہن سے
’شاہاں چہ عجب گر بنوازند گدا را!
(ارمغانِ حجاز)

ارمغانِ حجاز

غیرت ہے بڑی چیز جہانِ تگ و دو میںپہناتی ہے درویش کو تاجِ سرِ داراحاصل کسی ...

ارمغانِ حجاز

تقدیرِ اُمم کیا ہے‘ کوئی کہہ نہیں سکتامومن کی فراست ہو تو کافی ہے ...