سوامی اسیمانند کا اعتراف‘ بھارت کی پاکستان کیخلاف الزام تراشیوں کی قلعی کھل گئی: واشنگٹن پوسٹ

14 مارچ 2011
واشنگٹن (اے پی پی) معروف امریکی اخبار ”دی واشنگٹن پوسٹ “ نے کہا ہے کہ بھارتی بنیاد پرست سوامی اسیمانند کی جانب سے متعدد بم دھماکوں میں ملوث ہونے کے اعتراف نے نئی دہلی حکومت کی ہر دہشت گرد کارروائی کا الزام مسلمانوں اور پاکستان کے سر تھونپنے کی قلعی کھول دی ہے۔ معروف امریکی اخبار دی واشنگٹن پوسٹ نے گزشتہ روز اپنی شائع کردہ رپورٹ میں کہا ہے کہ حالیہ چند برسوں میں جب بھارت میں مسلمان آبادیوں کے قریب مساجد اور دیگر مذہبی عبادت گاہوں میں بم دھماکوں کا سلسلہ شروع ہوا تو ان کا الزام انتہا پسند مسلمانوں پر عائد کیا گیا اور دہشت گردی کے ہر واقعہ کے بعد بڑی تعداد میں مسلمانوں کو گرفتار اور تشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا اور تشدد کے ذریعے ان سے زبردستی اعتراف جرم کروا کر ماسٹر مائنڈ عسکریت پسندوں کے نام جاری کئے گئے اور ان کا تعلق ہمسایہ مسلمان ملک پاکستان سے جوڑا گیا۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ بھارت میں بم دھماکوں میں ہلاک ہونیوالوں کی اکثریت مسلمانوں کی تھی تاہم ان حملوں کا تعلق پاکستانی عسکریت پسندوں اور ان کے ہمدرد بھارتی مسلمانوں سے جوڑنے کیلئے بھارت میں مذہبی انتہا پسندی کو ہوا دینے اور جوہری طاقتوں کے مابین امن مذاکرات کو ناکام بنانے کیلئے تعصب کا مظاہرہ کیا گیا، امریکی اخبار نے لکھا ہے کہ بھارت پاکستان کے ساتھ امن مذاکرات کی بحالی کیلئے بضد ہے کہ پاکستان 2008ءکے ممبئی حملوں میں ملوث افراد کیخلاف باقاعدہ تحقیقات اور عدالتی کارروائی کرے جس کا پاکستان نے مثبت انداز میں جواب دیا ہے۔
واشنگٹن پوسٹ