آئندہ منشور میں سرائیکی صوبے کی حمایت کرینگے‘ انقلاب کا نعرہ لگانے والے مدت پورٹ کرنے دیں‘ پھر حساب مانگیں : گیلانی

14 مارچ 2011
ملتان + جلالپور پیروالہ (نمائندہ نوائے وقت+ سپیشل رپورٹر+وقت نیوز + ریڈیو نیوز+ ایجنسیاں) وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی آئندہ منشور مےں سرائیکی صوبے کے قیام کی حمایت کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب سے زیادہ محب وطن ہےں، ہم سے زیادہ اور کوئی مخلص اور محب وطن ہے اور نہ ہی کوئی زیادہ بننے کی کوشش کرے، ریمنڈ ڈیوس کے معاملے پر قانون کے مطابق کارروائی ہوگی۔ قومی وقار کے منافی کوئی کام نہیں کرینگے ۔ پنجاب اسمبلی مےں پیپلز پارٹی کی ہنگامہ آرائی صوبائی معاملہ ہے ہماری نواز شریف کے ساتھ ورکنگ ریلیشن شپ خراب نہیں، ان کے ساتھ راہیں جدا ہےں مگر مفاہمت کی سیاست جاری رکھیں گے۔ انقلاب کے نعرے لگانے والے ہمیں 5سال پورے کرنے دیں پھر حساب مانگیں ، اس سے پہلے حساب نہیں دینگے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملتان مےں بہاﺅالدین زکریا یونیورسٹی مےں گرڈ سٹیشن کی توسیع، نشتر ہسپتال مےں کینسر یونٹ کی افتتاحی تقریب سے خطاب، میڈیا سے گفتگو اور جلالپور پیر والا مےں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ملتان مےں گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ جہاں تک مسلم لیگ ق کے صدر کی قیادت مےں ق لیگ کے وفد کی صدر زرداری سے ملاقات کا معاملہ ہے تو وزارت عظمیٰ کے الیکشن کے موقع پر ق لیگ نے مجھے ووٹ دیا تھا ہم سب کو ساتھ لے کر چل رہے ہےں، تاہم انتخابی اتحاد کا فیصلہ وقت آنے پر کرینگے ابھی کچھ کہنا قبل از وقت ہے۔ وزیراعظم نے اعتراف کیا کہ پیپلز پارٹی مےں ”مینوفیکچرنگ فالٹ“ ہے، انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی مےں پیدائشی نقص پایا جاتا ہے ہم اپوزیشن مےں خود کو زیادہ بہتر محسوس کرتے ہےں۔ انہوں نے کہا کہ ڈی جی ایف آئی اے کا معاملہ سپریم کورٹ مےں ہے اس پر تبصرہ نہیں کروں گا۔ کراچی مےں امن و امان کا مسئلہ صوبائی معاملہ ہے، ٹارگٹ کلنگ کے معاملے پر حکمت عملی بنانے کا کہہ دیا ہے۔ ٹارگٹ کلنگ کے معاملے پر سب کو مل کر کام کرنا ہوگا، تمام صوبوں کے مینڈیٹ کا احترام کرتے ہےں، صوبائی معاملات پر کوئی رائے نہیں دوں گا، صوبے خود اس معاملے پر جواب دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ جب شہباز شریف نے ملاقات مےں کہا تھا کہ ہماری راہیں جدا ہوں گی تو اس وقت بھی مےں نے کہا تھا کہ ہم مفاہمت کی سیاست کریں گے۔ سابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اب بھی پیپلز پارٹی مےں ہےں۔ بہاءالدین زکریا یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر ظفر اللہ کی جانب سے دی گئی بریفنگ کے موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ تعلیم دہشت گردی اور انتہا پسندی کے خلاف ایک رکاوٹ ہے۔ تعلیم حکومت کی اولین ترجیح ہے، حکومت اسے ایجوکیشن فار آل پروگرام کو کامیابی سے آگے چلاتی رہے گی۔ 2011ءتعلیم کا سال ڈیکلیئر ہے ہماری خواہش ہے کہ نوجوانوں کو اس معاشرے کا بہترین شہری بنائیں۔ پسماندہ علاقوں کے نوجوانوں مےں بہت ٹیلنٹ ہے، ہماری کوشش ہے کہ اسے تعلیم و ترقی کےلئے کام مےں لایا جا سکے۔ وزیراعظم نے ملتان مےں 2گرڈ سٹیشنز اور نشتر ہسپتال مےں کینسر یونٹ کا سنگ بنیاد رکھا۔ اس پر 68کروڑ روپے لاگت آئے گی۔ وزیراعظم کی بہاءالدین زکریا یونیورسٹی ملتان آمد پر سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ وزیراعظم گیلانی سے قومی اسمبلی کے حلقہ 151 کے عمائدین نے ملاقات کی اور حلقے میں جاری ترقیاتی منصوبوں اور دیگر مسائل سے متعلق وزیراعظم کو آگاہ کیا۔ وزیراعظم نے کہا کہ حکومت جنوبی پنجاب میں جاری ترقیاتی منصوبے ترجیحی بنیادوں پر مکمل کرنے کیلئے ہرممکن اقدامات کر رہی ہے تاکہ ان کے فوائد جلد عام آدمی تک پہنچ سکیں۔ ترقیاتی منصوبوں کے بروقت مکمل کرنے پر وفاقی اور صوبائی حکومت متفق ہیں۔ حکومت ملک میں یکساں ترقی کے مواقع فراہم کر رہی ہے۔ جلالپور پیر والا مےں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم گیلانی نے کہا حکومت کے 5سال پورے ہونے دیں پھر حساب مانگا جائے اس سے پہلے کوئی حساب نہیں دوں گا، عوام کی مرضی سے آئے اور عوام کی مرضی سے جائیں گے۔ چور دروازے کے ذریعے اقتدار مےں نہیں آئے عوام کی خدمت اپوزیشن مےں بیٹھ کر بھی کی جا سکتی ہے، سیاست مےں عوام کی خدمت کےلئے آئے معلوم ہے کہ ملک مےں دہشت گردی، لاقانونیت، بےروزگاری، غربت اور مہنگائی ہے اس وقت کوئی سیاسی قیادت نہیں ہم نے مفاہمت کی سیاست شروع کی انقلاب کے نعرے لگانے والے 5سال پورے کرنے دیں پھر حساب مانگیں کوئی اور ہے جو تمام برائیوں کو ختم کرنے کی ذمہ داری اٹھائے، پیپلز پارٹی کی حکومت یہ مسائل حل کرنے کی کوشش کر رہی ہے، عوام چاہیں تو اپوزیشن مےں بیٹھنے کےلئے تیار ہےں۔ اقتدار کی بجائے عوام کی خدمت کرنے کو ترجیح دیتے ہےں، حکومت عوامی فلاح و بہبود کے منصوبوں کو جاری رکھے گی۔ پیپلز پارٹی کی طاقت عوام سے ہے، آٹا مہنگا ضرور ہے لیکن وافر مقدار مےں موجود ہے، سروے کر رہے ہےں غریبوں کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے ذریعے مدد دیں گے، غریب آدمی کو ووٹ کا شعور ذوالفقار بھٹو نے دیا آئندہ منشور مےں سرائیکی صوبے کی حمایت کریں گے، مہنگائی پر قابو پانے کےلئے اقدامات کر رہے ہےں۔
وزیراعظم گیلانی