مالک مکان کا تعلق کالعدم تنظیم سے ہے‘ بھائی سمیت ہسپتال سے گرفتار

14 جولائی 2009
خانیوال/ میاں چنوں (نامہ نگاران+ ایجنسیاں) پولیس نے میاں چنوں کے جس گھر میں دھماکہ ہوا اس کے مالک ماسٹر محمد ریاض اور اس کے بھائی کو زخمی حالت میں ہسپتال سے اور اس کے دیگر 6ساتھیوں کو گائوں سے گرفتار کر لیا۔ ماسٹر ریاض کالعدم تنظیم کا رکن ہے اور سات آٹھ سال افغان جنگ میں شامل رہ چکا ہے۔ خانیوال سے خبرنگار کے مطابق محمد ریاض کا گھر کالعدم جہادی تنظیم کا مرکز بتایا جاتا ہے۔ محمد ریاض گورنمنٹ سکول 15/BBRمیں ایجوکیٹر ہے اور 2002ء میں محکمہ تعلیم میں بھرتی ہوا۔ قبل ازیں محمد ریاض نے افغانستان میں جہاد کی ٹریننگ لی اور روس کے خلاف جہاد میں شریک رہا۔ وہ ابھی غیرشادی شدہ ہے۔ اسکے گھر کے ملبے سے جہادی لٹریچر‘ کالعدم حرکت الجہاد الاسلامی، نقیب ختم نبوت کے رسالے اور ویڈیوز برآمد ہوئے ہیں۔ اے پی پی کے مطابق ماسٹر ریاض کے چھ بھائی اور متعدد بہنیں ہیں جن میں سے ایک بہن ڈاکٹر اور دو بھائی میاں چنوں میں وکالت کرتے ہیں۔ ماسٹر ریاض اور اس کے خاندان کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ اس کا والد علی شیر کمبوہ علاقہ کی یونین کونسل کا وائس چیئرمین رہا ہے۔ ذرائع کے مطابق میاں چنوں پولیس نے کچھ عرصہ قبل مشکوک سرگرمیوں کی بناء پر ماسٹر ریاض کو گرفتار کیا تھا لیکن اس کے وکیل بھائیوں نے اثرورسوخ استعمال کرتے ہوئے اسے رہا کرا لیا تھا۔ ماسٹر ریاض کی بہن میمونہ ڈاکٹر ہے اور وہ میاں چنوں کے تحصیل ہسپتال میں تعینات ہے۔
گرفتار