عالمی بنک کا بجلی کے نرخ 31 فیصد بڑھانے کا تقاضا

14 جولائی 2009
اسلام آباد (عترت جعفری) عالمی بینک نے پاکستان سے کہا ہے کہ واپڈا کے لائن لاسز میں کمی کی جائے اور بجلی کی قیمت کو بڑھایا جائے۔ گذشتہ روز پاکستان‘ عالمی بنک اور اے ڈی بی کے نمائندوں کے پاور ٹیرف پر مذاکرات ہوئے دونوں اداروں کی رپورٹ کی روشنی میں ہی آئی ایم ایف کا بورڈ پاکستان کے لئے 850ملین ڈالر کی قسط کے اجرا کا حتمی فیصلہ کرے گا۔ گذشتہ روز مذاکرات کے دو رائونڈ ہوئے۔ ذرائع نے بتایا کہ پاور ٹیرف مرحلہ وار بڑھایا جائیگا اور عوام کو پہلے مرحلہ میں پانچ سے سات فیصد بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کا سامنا جلد کرنا پڑے گا۔ عالمی بینک کا مئوقف ہے کہ ٹیرف میں 31فیصد اضافہ کیا جائے جبکہ حکومت پاکستان 17.5فیصد اضافہ کے لئے آمادہ ہے تاہم یہ اضافہ بھی مرحلہ وار کرنا چاہتی ہے۔ مذاکرات میں عالمی بینک نے بجلی کے بلوں کے بھاری بقایاجات بھی تشویش ظاہر کی۔ ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف بجلی پر 55ارب سبسڈی دینے پر رضامند ہو گیا تاہم یہ رقم ترقیاتی اخراجات میں کمی کرکے دی جائے۔