لاہور سمیت کئی شہروں میں آندھی اور بارش‘ چھتیں‘ دیواریں گرنے سے 8 افراد ہلاک

14 جولائی 2009
لاہور (سٹی رپورٹر + خبرنگار خصوصی + نیوز رپورٹر + نامہ نگاران) پنجاب کے کئی شہروں میں آندھی اور بارش سے گرمی کا زور ٹوٹ گیا۔ بارش کے دوران حادثات کے باعث 8 افراد ہلاک ہو گئے تاہم موسم خوشگوار ہونے کے باوجود لوڈشیڈنگ جاری رہی اور اس کے خلاف مظاہرے کے دوران شہریوں پر لاٹھی چارج کے بعد پولیس نے انجمن تاجران کے صدر سمیت 155افراد کیخلاف دہشت گردی اور 16 ایم پی او کے تحت مقدمہ درج کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں گزشتہ سہ پہر 3 کے بعد شدید آندھی آئی اور پھر موسلادھار بارش ہوئی جس سے ہر طرف جل تھل ہوگیا۔ نشیبی علاقوں میں اور سڑکوں پر پانی جمع ہو گیا بارش سے لیسکو کے 280 فیڈر ٹرپ کر گئے اور 166 بار بجلی کی ٹرپنگ ہوئی جس سے لوگوں کے قیمتی الیکٹرانکس آلات جل گئے۔ متعدد علاقے 5 گھنٹے تک اندھیرے میں ڈوبے رہے جبکہ جوہر ٹائون کے گرڈ سٹیشن میں خرابی کے باعث وسیع علاقے کی بجلی رات گئے تک بند رہی اس کے علاوہ دن بھر وقفہ وقفہ سے ہونیوالی لوڈشیڈنگ نے عوام کا جینا حرام کئے رکھا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق لاہور میں گزشتہ روز آنیوالی آندھی کی رفتار 61 کلو میٹر فی گھنٹہ تھی۔ بارشوں کا یہ سلسلہ آج دو پہر تک ختم ہو جائے گا۔ اگلے 24 گھنٹوں میں راولپنڈی‘ لاہور ‘ بہاولپور‘ فیصل آباد‘ سرگودھا‘ پشاور‘ کوہاٹ میں بعض مقامات پر آندھی اور بارش ہونے کا امکان ہے جبکہ بارش کے باعث لاہور ایئر پورٹ پر پروازوں کا نظام متاثر ہوا اسلام آباد اور دبئی سے آنیوالی پرواز کو کراچی بھجوا دیا گیا اس کے علاوہ کئی پروازیں 3 سے 5 گھنٹے کی تاخیر کا شکار ہوئیں۔ مریدکے سے نامہ نگار کے مطابق شدید بارش اور آندھی کے باعث دیوار گرنے سے 1 سالہ بچہ فہد جاں بحق اور مختلف مقامات پر چھتیں دیواریں گرنے سے 26 افراد زخمی ہوگئے بارش کے بعد گلیوں بازاروں میں کئی کئی فٹ پانی کھڑا ہو گیا جبکہ واپڈا حکام نے 7 گھنٹے بجلی بند رکھی فیروزوالا سے نامہ نگار کے مطابق جاوید نگر کے قریب آندھی بارش کے باعث زیر تعمیر فیکٹری کی دیوار گرنے سے دو افراد محمد یونس اور محمد شریف جاں بحق ایک نوجوان کاشف شدید زخمی ہو گیا۔ رچنا ٹائون میں دیوار گرنے سے 12 سالہ لڑکی سحر نعیم کا پائوں کٹ گیا۔ گوجرانوالہ سے نمائندہ خصوصی کے مطابق بارش کے باعث ملہی چوک کے قریب دیوار گرنے سے نوشہرہ سانسی کا رہائشی محمد ارشد جاں بحق جبکہ اس کی بیوی شدید زخمی ہو گئی سادھوکی میں گھرکی چھت گرنے سے 8 سالہ بچہ جاں بحق ہوگیا قلعہ دیدار سنگھ کے گائوں ہیگراں والی میں گھر کی دیوار گرنے سے 13 سالہ ثانیہ جاں بحق 10 سالہ اقرا شدید ز خمی ہوگئی۔ لدھے والہ وڑائچ میں 65 سالہ تاج دین آسمانی بجلی گرنے سے جھلس گیا۔ گٹانوالہ سے نامہ نگار کے مطابق عثمان ٹائون میں آندھی کے باعث دیوار گرنے سے مظہر حیات رانجھا کی بیٹی جاں بحق ہو گئی متوفیہ کے گھر والے گزشتہ روز ہی نئے مکان میں منتقل ہوئے تھے۔ کوٹ مومن سے نامہ نگار کے مطلابق گائوں بہک لڑکا میں آندھی کے باعث چھت سے گر کر نذیر احمد کی بیٹی ’’ر‘‘ جاں بحق ہو گئی۔ نارنگ منڈی سے نامہ نگار کے مطابق طوفان باد و باراں کے باعث کئی گھروں کی دیواریں گرنے سے 7 افراد شدید زخمی ہو گئے۔ اس کے علاوہ کامونکے‘ قلعہ دیدار سنگھ‘ بچیانہ اور اجنیانوالہ‘ شیخوپورہ‘ نارنگ منڈی‘ بھکر میں بھی بارش کی اطلاعات ملی ہیں جبکہ لالہ موسی اور گجرات سے نامہ نگار کے مطابق پولیس نے گزشتہ روز لوڈشیڈنگ کیخلاف مظاہرے کے دوران لاٹھی چارج کے بعد انجمن تاجران لالہ موسی کے صدر خالد محمود ڈار، سیکرٹری محمد عارف‘ حاجی اختر برنوالہ سمیت 30 افراد کیخلاف نامزد اور 125 نامعلوم افراد کیخلاف دہشت گردی کی دفعات 16 ایم پی او کے تحت مقدمہ درج کر لیا جبکہ 50 سے زائد ا فراد کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا ہے۔ واضح رہے کہ مشتعل مظاہرین نے وفاقی وزیرا طلاعات قمر الزمان کائرہ پر بوتلیں اور جوتیاں پھینک دی تھیں۔ علی پور چٹھہ سے نامہ نگار کے مطابق 18 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کے خلاف کاشتکاروں نے پرویز اختر چٹھہ کی زیر قیادت پریس کلب کے سامنے مظاہرہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ پانی نہ ہونے سے مونجی کی فصل تباہ ہو رہی ہے۔ عارفوالہ سے نامہ نگار کے مطابق لوڈشیڈنگ کیخلاف کسان بورڈ کے زیر اہتمام غلہ منڈی سے کچہری تک ریلی نکالی گئی مظاہرین نے ٹائر جلا کر بہاولنگر روڈ بلاک کر دی چک 21 ای بی کے قریب ہوتر روڈ پر سینکڑوں کاشتکاروں نے بھی لوڈشیڈنگ کے خلاف مظاہرہ کیا۔ سمندری سے نامہ نگار کے مطابق محلہ اشرف آباد اور شوکت آباد کے سینکڑوں مکینوں نے لوڈشیڈنگ کیخلاف مظاہرہ کیا گوجرہ سے نامہ نگار کے مطابق لیبر قومی موومنٹ‘ لیبر پارٹی اور پاکستان ہیومن رائٹس ویلفیئر کونسل کے زیر اہتمام جھنگ روڈ پر احتجاجی جلوس نکالا گیا۔ فیصل آباد سے نامہ نگار خصوصی کے مطابق پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں دوبارہ اضافے اور لوڈشیڈنگ کے خلاف پاکستان عوامی تحریک نے دھوبی گھاٹ سے چوک گھنٹہ گھر تک جلوس نکالا شیخ زاہد فیاض‘ رانا نثار احمد شہزاد اور دیگر نے کہا کہ لوڈشیڈنگ اور پٹرولیم مصنوعات کی مہنگائی سے انڈسٹری تباہ لاکھوں مزدور بے روزگار ہوگئے ہیں۔