علامہ اقبال کو سمجھنے سے ہم کئی سلطنتیں تخلیق کر سکتے ہیں : شجاعت ہاشمی

14 جولائی 2009
لاہور (خبر نگار خصوصی) معروف اداکار شجاعت ہاشمی نے کہا ہے کہ پاکستان قائداعظمؒ کی عظمت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ علامہ محمد اقبال ؒ کی شاعری نے مسلمانان برصغیر میں انقلابی روح پھونکی۔ اگر علامہ محمد اقبال ؒ کے کلام کو ٹھیک طرح سمجھا اور پھر اس پر عمل کیا جائے تو ہم کئی نئی سلطنتیں تخلیق کر سکتے ہیں وہ نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام ایوان کارکنان تحریک پاکستان‘ شاہراہ قائداعظمؒ لاہور میں نظریاتی سمر سکول کے پندرہویں دن طلباء و طالبات سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر میاں عزیز الحق قریشی‘ پروفیسر ڈاکٹر سرفراز حسین مرزا‘ بیگم صفیہ اسحاق اور علامہ پروفیسر محمد مظفر مرزا بھی موجود تھے۔ تقریب کا باقاعدہ آغا تلاوت قرآن مجید اور قومی ترانے سے ہوا۔ تلاوت کی سعادت شاہ زیب نے حاصل کی۔ فجر شہزادی اردو اور مشال مظہر نے انگریزی ترجمہ پیش کیا۔ بارگاہ نبویﷺ میں لائبہ نے ہدیہ نعت پیش کیا۔ سٹیج سیکرٹری کے فرائض درنجف نے سرانجام دیئے۔ شجاعت ہاشمی نے کہا کہ اگر آپ کائنات کا نقشہ دیکھیں تو معلوم ہوگا کہ دنیا بے حد محدود ہے اور کائنات بہت بڑی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دنیا کے 235 ممالک میں ایک ملک ہمارا پاکستان ہے جہاں دنیا کے ہر قسم کے موسم‘ پہاڑ‘ میدان‘ جنگل‘ صحرا ہیں یہاں ہر قسم کے پھل سبزیاں اور دیگر چیزیں پائی جاتی ہیں انہوں نے کہا کہ ہم اس لحاظ سے بے حد خوش قسمت ہیں کہ مسلمان ہیں اور آنحضرتﷺ کی امت سے ہیں اور پھر یہ کہ ہمیں علامہ اقبال ؒ اور قائداعظمؒ جیسے عظم رہنما حاصل ہوئے انہوں نے کہا کہ مورخین نے یہ کہا ہے کہ قائداعظمؒ جیسا دوسرا کوئی لیڈر نہیں ہے۔ علامہ اقبال ؒ چاہتے تھے مسلمان پھر سے عروج حاصل کریں مسلمانوں کو سستی اور غفلت چھوڑ کر ترقی والا راستہ اختیار کرنا چاہئے۔
نظریاتی سمر سکول کے بچوں نے مہمان خصوصی سے دلچسپ سوالات بھی کئے سوالات کرنیوالوں میں عروۃ الوثقیٰ‘ مریم‘ ثنائ‘ محمد فہد‘ ملائکہ صابر‘ احمد توثیق‘ مہک صابر‘ ارتضیٰ علی شامل تھے۔ نظریاتی سمر سکول کی سرگرمیوں میں طلبہ وطالبات کے مابین مس فوزیہ نور اور مسز روبینہ ارشد کی رہنمائی میں بیت بازی کا مقابلہ ہوا جس میں حفصہ شاہد‘ محمد غضنفر‘ عشنہ حفیظ اور مریم ظفر نے انعام حاصل کیا۔ موم بتیاں سجانے کے مقابلے میں لائبہ‘ زین العابدین‘ عاطف حسین‘ مناہل فاطمہ‘ عشنہ احمد اور لیمپ بنانے کے مقابلے میں فاطمہ اسلم‘ نوشیرواں‘ انجلینا اور طہٰ جاوید نے انعام حاصل کیا۔ انگریزی الفاظ کے صحیح سپیلنگ لکھنے کے مقابلے میں دعا ایثار‘ خدیجہ ذوالفقار‘ نور العین‘ سمیرا آفتاب‘ محمد راضین‘ تحریم شعیب ملک‘ رابعہ ندیم‘ انعم ندیم‘ عروبہ علیم‘ فیبیا افضل‘ رصما الحق‘ مشعل مظہر اور انور نوشہ نعیم کو انعام دیا گیا۔ سائنس کوئز کے مقابلے میں ماہ نور طاہر اور فضا حسین نے انعام حاصل کیا۔ بہترین طالب علم کا انعام سمیرا آفتاب اور احمد توفیق جبکہ مانیٹر آف دی ڈے کا انعام افق سید واسطی کو دیا گیا۔ نظریاتی سمر سکول کی طالبہ مریم طاہرہ کو خصوصی انعام دیا گیا مریم طاہرہ گزشتہ تین برس سے ہر سال نظریاتی سمر سکول میں داخل ہوتی ہیں جس نے ان کی صلاحیتوں کو جلا بخشی یہی وجہ ہے کہ انہوں نے گزشتہ دنوں سکولوں کے طلبہ کے مابین ملی نغمہ پڑھنے کے قومی مقابلے میں تیسری پوزیشن حاصل کی۔ تقریب کے اختتام پر نظریہ پاکستان ٹرسٹ کے چیف کوآرڈی نیٹر میاں عزیز الحق قریشی نے مہمان خصوصی کو یادگاری شیلڈ اور ٹرسٹ کی مطبوعات کا سیٹ پیش کیا۔ تقریب کا اختتام پاکستان‘ قائداعظمؒ‘ علامہ محمد اقبال ؒ اور مادر ملتؒ زندہ باد کے نعروں سے ہوا۔