عوام دوست 88.8 FM کا آغاز

14 جولائی 2009
اگرچہ ٹی وی آنے کے بعد ریڈیو نشریات کا دائرہ سکڑ گیا ہے لیکن دنیا بھر میں ریڈیو آج بھی مقبول ہے۔ خصوصاً شہروں میں ٹریفک کی صورتحال جاننے کے لئے اس میڈیم کی بہت اہمیت ہے‘ یہی سبب ہے کہ جب لاہور کے لئے نئی ٹریفک پولیس بنائی گئی تو نوائے وقت نے تجویز دی تھی کہ لاہور میں ٹریفک کا نظام رواں دواں رکھنے کے لئے ایک ایف ایم ٹریفک ریڈیو کی ضرورت ہے جس پر اس وقت کے CCPO نے بہت خوشی کا اظہار کیا اور مختلف مراحل طے کرنے کے بعد بالآخر اتوار کے روز شام چھ بجے سے ایف ایم 88.8 کا باقاعدہ افتتاح سپیکر پنجاب اسمبلی نے کر دیا۔ ایس ایس پی ٹریفک مرزا شکیل بیگ نے نوائے وقت کو بتایا ایف ایم 88.8 کے قیام سے لاہور کی ٹریفک کو بہتر بنانے اور نظام کو رواں دواں رکھنے میں بہت مدد ملے گی۔ اس کے ذریعہ سے شہریوں کو بتایا جائے گا کہ کس سڑک پر ٹریفک جام ہے اور اس کے متبادل راستے کون کون سے ہیں‘ ٹرینوں اور جہازوں کے مسافروں کے لئے دونوں اداروں سے انٹرلنک پیدا کر کے تازہ ترین صورت حال بیان کی جائے گی۔ اب عوام کو ریلوے یا ائرپورٹ انکوائری پر رش کرنے کی ضرورت نہیں کہ کونسی ٹرین یا جہاز کب آئے گا یا جائے گا بلکہ ایف ایم ریڈیو راہنمائی کرے گا اور اس سلسلہ میں ایک ہیلپ لائن 1915 بھی قائم کی گئی ہے جو ٹریفک کے متعلق ہر قسم کی ہیلپ فراہم کرے گی۔ اس کی افادیت 15 جیسی ہے۔ اس ہیلپ لائن کا سب سے بڑا فائدہ ہے کہ عوام براہ راست فون کر کے نہ صرف اپنی شکایات درج کرا سکیں گے بلکہ لائسنس سے لے کہ ٹریفک سے متعلقہ ہر سوال کا تسلی بخش جواب بھی لے سکیں گے۔ اس میں مزید اضافہ کرتے ہوئے ٹول فری سروس SMS کے لئے بھی فراہم کی گئی ہے۔ 0321-4236888 پر ٹریفک کے بارے میں کوئی بھی شکایت پیش کی جا سکتی ہے اگر کسی جگہ ٹریفک بلاک ہو تو ذمہ دار شہریوں کا فرض ہے کہ فوراً ٹریفک پولیس کو اطلاع دیں۔
CCPO پرویز راٹھور نے اس چینل کے اجراء پر خوشی کا اظہار کیا اور بتایا کہ اس چینل سے کرائم کنٹرول کرنے میں بھی مدد لی جائے گی۔ ویسے یہ حقیقت ہے کہ اگر اس چینل کو موثر طریقے سے استعمال کیا جائے تو نہ صرف لاہور سے کار چوری وغیرہ ناممکن ہو جائے بلکہ کرائم (سٹریٹ کرائمز سمیت) کر کے بھاگنا بھی ناممکن ہو جائے‘ لاہوریوں کو اس نئے چینل سے بہت سی توقعات ہیں دیکھیں کتنی پوری ہوتی ہیں؟