قومی ترانے کے خالق حفیظ جالندھری کا آج 118واں یوم پیدائش منایا جا رہا ہے

14 جنوری 2018 (13:38)

قومی ترانے کے خالق،نامور شاعر ابو الاثر حفیظ جالندھری کا 118واں یوم پیدائش 14 جنوری آج منایا جا رہا ہے۔اس دن کے حوالے سے مسلم لیگ اوردیگر جماعتوں اور تنظیموں کے زیر اہتمام مختلف تقریبات کا اہتمام کیا گیا ہے۔جس سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے حفیظ جالندھری کی ادبی و ملی خدمات کو خراج عقیدت پیش کیا۔ابوالاثر حفیظ جالندھری 14جنوری 1900ءکو بھارت کے علاقہ جالندھر میں پیدا ہوئے آزادی کے بعد انہوں نے لاہور کی جانب نقل مکانی کی۔حفیظ جالندھر ی معروف شاعر اور نثر نگار تھے ان کی شاعری مذہبی ،حب الوطنی اور لوک گیتوں پر مشتمل تھی ۔ انہوں نے پاکستان کا قومی ترانہ تخلیق کر کے شہرت حاصل کی حفیظ جالندھری نے آزاد کشمیر کا قومی ترانہ بھی لکھا ۔حفیظ جالندھر ی نے اگرچہ کسی تعلیمی ادارے سے اسناد حاصل نہیں کیں انہوں نے صرف رسمی تعلیم حاصل کی لیکن تعلیم کی اس کمی کو انہوں نے بھرپور مطالعہ اور ریاضت سے پورا کیا اور اپنی تعلیمی استعداد بڑھائی ۔انہوں نے اپنی محنت اور لگن سے نامور شعراءمیں جگہ بنا لی اس سلسلے میں انہیں اعلیٰ تعلیم یافتہ فارسی کے عظیم شاعر مولاناغلام قادر بلگرامی کی سرپرستی حاصل رہی ہے۔ حفیظ جالندھری کی شاعری کا محور محبت،مذہب اوروطن دوستی ہے حفیظ جالندھری مرحوم نے تحریک آزادی میں بھی بھرپور انداز سے حصہ لیا انہوں نے آزادی کی تحریک کو اجاگر کرنے کیلئے اپنی انقلابی شاعری کو ذریعہ بنایا حفیظ جالندھری کو تمغہ حسن کارکردگی اور ہلال امتیاز سے نوازا جا چکا ہے۔ابوالاثر حفیظ جالندھری 21 دسمبر 1982ءکو 82برس کی عمر میں انتقال کر گئے تھے ۔