بے زبانی۔۔۔۔۔ظفر علی راجا

14 فروری 2018

طاہرانِ بے زباں کی مت زباں کھُلوایئے
پھیل جائے گی کہانی گلستاں در گلستاں
تنکا تنکا جوڑنے کی بات کیسے کیجئے
تنکا تنکا ہَے یہاں جمہوریت کا آشیاں