ترجمان چودھری نثار علی خان کا اظہار تشکر

14 فروری 2018

مکرمی! روزنامہ نوائے وقت میں آج مورخہ 12 فروری 2018ء کو ’’چودھری نثار کی پریس کانفرنس کے مضمرات‘‘ کے عنوان سے شائع ہونے والے شذرے کے حوالے سے میں سب سے پہلے ادارتی ٹیم کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں جنہوں نے چودھری نثار علی خان کے سیاسی کیرئر، پارٹی سے رفاقت اور وابستگی اور اداروں سے تعلقات کے حوالے سے حقائق قلم بند کیے ہیں۔ اس کے ساتھ ساتھ میں ایک دو نکات پر بھی وضاحت کرنے کی اجازت چاہتا ہوں۔ اول، میڈیا نمائندگان سے یہ بات چیت چودھری نثار علی خان کے ٹیکسلا کے دورے کے دوران ہوئی تاہم یہ نہ تو پریس کانفرنس تھی اور نہ کسی خاص مقصد کے لئے میڈیا نمائندگان کو مدعو کیا گیا تھا۔ دوئم مریم نواز صاحبہ کے حوالے سے بات چودھری نثار علی خان نے نہیں کی بلکہ میڈیا حضرات کے پے در پے سوالات پر انہیں وضاحت کرنی پڑی۔ اس بات چیت میں میڈیا نمائندگان کی جانب سے صرف اس موضوع پر نسبتاً زیادہ فوکس کیا گیا اور ان کے ایک سابقہ انٹرویو کا بھی خصوصی طور پر حوالہ دیا گیا اور انہی سوالات کا جواب دیتے ہوئے چودھری نثار نے اپنے سابقہ انٹرویو کی تائید کی۔ چودھری صاحب کی جانب سے پارٹی معاملات کو پبلک فورم پر زیرِ بحث نہ لانے کی حتی المقدور کوشش کی جاتی رہی ہے۔ تاہم میڈیا نمائندگان کے اصرار پر انہوں نے محض ایک دو معاملات پر صرف اپنا موقف اور نقطہ نظر بیان کیا۔ پارٹی قیادت کے لئے صرف عمر نہیں، بلکہ دیگر بہت سی صلاحیتوں کی بھی ضرورت ہوتی ہے تو کیا ان دیگر صلاحیتوں میں تجربہ کی کوئی حیثیت نہیں۔ اگر آپ چودھری نثار علی خان کا سابقہ انٹرویو اور ٹیکسلا میں ہوئی بات چیت ملاحظہ کی جائے تو ان کا موقف سمجھنے میں کافی حد تک مدد ملے گی۔ (توصیف علی خان، ترجمان چودھری نثار علی خان)