میڈیکل کالجزمیں فیس 6لاکھ 45ہزارروپےسالانہ سے زائدنہ لی جائے:چیف جسٹس ثاقب نثار

13 جنوری 2018 (14:43)

نجی میڈیکل کالجوں میں داخلوں سے متعلق چیف جسٹس میاں ثاقب نثارنے کہا ہے کہ پی ایم ڈی سی کا کیا طریقہ کار ہے. ہم معیار طے کریں گے، ہم ایڈمیشن منسوخ نہیں کر رہے لیکن پی ایم ڈی سی مزید کسی کالج کو رجسٹرڈ نہیں کرے گا.ہم اس پورے معاملے کا جائزہ لے رہے ہیں۔ہفتہ کو چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس فیصل عرب اور جسٹس سجاد علی شاہ پر مشتمل تین رکنی بینچ نے کراچی میں میڈیکل کالجوں سے متعلق کیس کی سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں سماعت کی.سماعت کے دوران عدالت نے حکم جاری کیا کہ جن میڈیکل کالجزمیں داخلے دیے گئے ہیں وہاں فیس 6لاکھ 45ہزارروپےسالانہ سے زائدنہ لی جائے۔سماعت کے موقع پر معزز جج نے نجی کالج کے مالکان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ التجا سمجھیں، بڑے بھائی کی بات سمجھیں یا حکم، انسپکشن ٹیم جائے گی تو پھر کوئی رعایت نہیں ملے گی۔سماعت میں یہ بھی کہا گیا کہ عدالتی کارروائی مکمل ہونے تک یہ احکامات پورے ملک پر لاگو ہوں گے۔