عُنصروں کاتماشا

13 فروری 2018

قائم یہ عُنصروں کاتماشا تجھی سے ہے
ہر شے میں زندگی کا تقاضا تجھی سے ہے
ہر شے کو تیری جلوہ گری سے ثبات ہے
تیرا یہ سوز و ساز سراپا حیات ہے
بانگِ درا