تحریک انصاف کی حکومت کا فنانس بل 2018-19 میں ترامیم کرکے اپنا بجٹ لانے کا فیصلہ

Sep 12, 2018 | 15:52

ویب ڈیسک

 پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے فنانس بل 2018-19ء میں ترامیم کرکے اپنا بجٹ لانے کا فیصلہ ہے۔ 2018-19ء کا فنانس بل (ن) لیگ کی حکومت کی جانب سے منظور کیا گیا تھا۔ نجی ٹی وی کے مطابق پی ٹی آئی حکومت نے 2018-19ء کے مالی سال کے لئے اپنا بجٹ پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ گذشتہ حکومت نے ٹیکس دینے کے لئے سالانہ آمدن کی شرح چار لاکھ روپے سے بڑھا کر 12لاکھ کر دی تھی۔ اب پی ٹی آئی حکومت نے درمیانہ راستہ نکالتے ہوئے اسے آٹھ لاکھ روپے کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ فنانس بل میں 400 ارب روپے کا اضافی ریونیو اکٹھا کرنے کے حوالے سے اقدامات کی منظوری لی جائے گی جبکہ 5600 اشیاء پر ایک فیصد درآمدی ڈیوٹی لگائی جائے گی جبکہ تمام اشیاء پر ایک فیصد ریگولیٹری ڈیوٹی لگائی جائے گی۔ فنانس بل 2018-19ء میں تبدیلیاں لانے کے لئے گذشتہ چند روز کے دوران متعدد اجلاس وزیر خزانہ اسد عمرکی سربراہی میں منعقد ہو چکے ہیں۔ فنانس بل 2018-19ء میں بڑی تبدیلیاں لانے کے حوالے سے منظوری کل (جمعہ)کے روز سے شروع ہونے والے قومی اسمبلی اجلاس سے لی جائیں گی۔

مزیدخبریں