مقبوضہ کشمیر: مزید 2 نوجوان، پی ایچ ڈی سکالر شہید، زبردست احتجاج، جھڑپیں، کئی ز خمی

Sep 12, 2018

سرینگر، جنیوا (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے اپنی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران ضلع کپواڑہ میں دواور کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق فوجیوںنے منگل کو نوجوانوں کو ضلع میں ہندواڑہ کے علاقے گلورہ میں تلاشی اور محاصرے کی کارروائی کے دوران شہید کیا۔ آخری اطلاعات ملنے تک علاقے میں فوجی کارروائی جاری تھی۔ واقعہ کیخلاف زبردست احتجاج کیا گیا۔بھارتی فورسز کے تشدد سے کئی زخمی ہوگئے۔ ادھر قابض انتظامیہ نے نوجوانوں کے قتل کے خلاف احتجاجی مظاہروں کو روکنے کیلئے ہندواڑہ میں موبائل انٹرنیٹ سروس معطل اور تعلیمی ادارے بند کردیئے ہیں۔ دریں اثناء سرینگر کے علاقے خانیار میںسرکاری بندوق بردار نے42 سالہ پی ایچ ڈی سکالر کو قتل کردیا ۔ ضلع کپواڑہ کے علاقے لولاب کا رہائشی عبدالاحد گنائی علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے ڈاکٹریٹ کررہا تھا ۔ وہ اپنے رشتہ داروں سے ملاقات کیلئے خانیار آیا تھا۔ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی فوجیوںنے ضلع پلوامہ میں اسلامک یونیورسٹی آف سائنس و ٹیکنالوجی کے طلباء کو ہراساں کیا ہے ۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق بی ٹیک کے پانچویں سمسٹر کے طلباء و طالبات سمیت 50طالب علموں کے گروپ نے سرینگر میں میڈیا کو بتایا کہ وہ اپنے اساتذہ کی ہدایت کے مطابق سروے کرنے کی مشق میں مصروف تھے جب وہاں سے گزرنے والے بھارتی فوجیوں کے ایک گروپ نے دوطلباء کو بلا کر ان سے پوچھ گچھ کی۔ بعدازاں فوجیوںنے انہیں گولیاں دیتے ہوئے کہاکہ انہیں بندوق اٹھا لینی چاہیے۔طلباء نے اس واقعے میں ملوث فوجیوں کے خلاف کارروائی کیلئے احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مقبوضہ کشمیر میں سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یٰسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے بومئی سوپور میںحکیم الرحمان سلطانی کو شہید کئے جانے کے خلاف 14 ستمبرکو سوپور اور زینہ گیر کے علاقوںمیں مکمل ہڑتال کرنے اور نماز جمعہ کے موقع پر انہیں شاندار خراج عقیدت پیش کرنے کی اپیل کی ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق آزادی پسند رہنمائوں نے حیدرپورہ سرینگر میں ایک ہنگامی اجلاس کے بعد جاری بیان میں کہا کہ قوم ایسے محسنوں اور سرفروشوں کی عظیم قربانیوں کو ہمیشہ یاد کرتی رہے گی۔دوسری جانب اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل نے مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی پامالیوں سے متعلق اپنی رپورٹ پر کارروائی نہ کرنے پر بھارت کی شدید سر زنش کرتے ہو ئے کہا ہے کہ کشمیری عوام کو بھی دیگر انسانوں کی طرح مساوی حقوق فراہم کئے جائیں۔کشمیر میڈیاسروس کے مطابق انسانی حقوق کے بارے میں عالمی ادارے کی نو منتخب ہائی کمشنر میچیلی بیچھ لیٹ نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے 39 ویں اجلاس سے اپنے پہلے خطاب میں کہاکہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کو بھی دنیا بھر کے لوگوں کی طرح انصاف اور عزت و وقار کے یکساں حقوق حاصل ہیں۔ انہوںنے مقبوضہ کشمیرمیںانسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کے بارے میں عالمی ادارے کی حالیہ رپورٹ پر نتیجہ خیز پیشرفت نہ کر نے پربھارت پر شدید نکتہ چینی کی ۔ انہوںنے کہاکشمیری عوام کو اسی طرح کے انصاف اور عزت کے حقوق حاصل ہیں جو پوری دنیا کے لوگوں کو حاصل ہیں اور ہم بھارتی حکام پر زور دے رہے ہیں کہ وہ اسے تسلیم کریں۔انہوں نے بھارت پر زور دیا کہ وہ جموں کشمیرکے لو گوں کو بھی یکساں حقوق فراہم کرتے ہو ئے کسی بھی پا مالی کا بر وقت اور سنجیدہ نو ٹس لے کر اپنی منصبی ذمہ داری کو پورا کرے۔انہوں نے اقوام متحدہ کے کمیشن برائے انسانی حقوق کی طرف سے کنٹرول لائن کے دو نوں اطراف موجود منقسم کشمیری خاندانوں کواپنے پیاروں سے ملاقات کیلئے آر پار رسائی دینے کی اپیل دہراتے ہو ئے بھارت اور پاکستان پر زودیاکہ وہ انسانی حقوق کی پامالیوں سے متعلق شکایا ت کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کا موقع فراہم کریں۔متحدہ جہاد کونسل کے سربراہ سید صلاح الدین کے حال ہی میں گرفتار کئے گئے دوسرے بیٹے کے خلاف مزید تیس دنوں کا ریمانڈ حاصل کرلیا گیا۔ سید صلاح الدین کے دوسرے فرزند شکیل احمد جسے این آئی اے نے گزشتہ دنوں گرفتار کرکے دہلی لے لیا تھا کو ایک بار پھر ایک عدالت میں پیش کیا گیا جہاں این آئی اے نے اس کے خلاف مزید 30 دن کا ریمانڈ حاصل کیا ہے۔

مزیدخبریں