فاطمہ جناح ہسپتال کی لیڈی ڈاکٹرز اور عملہ کیخلاف مریضوں و لواحقین سے بدسلوکی کی شکایات

Sep 12, 2018

ملتان (وقائع نگار) میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈی ایچ کیو شہباز شریف ہسپتال ڈاکٹر نبیل سلیم نے فاطمہ جناح گائنی ہسپتال کے ڈاکٹرز کو مریضوں کے لواحقین کی کونسلنگ کرنے کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔ ایم ایس کو سنٹرل کمپلینٹ سسٹم کے تحت فاطمہ جناح ہسپتال کی لیڈی ڈاکٹرز اور دیگر کی طرف سے مریضوں سے بدسلوکی کی 4 مختلف شکایات موصول ہوئی تھیں جس کے بعد مریضوں اور لواحقین کے ساتھ رویہ درست کرنے اور انکی مناسب رہنمائی کرنے کے لئے احکامات صادر کئے گئے ہیں۔ مریضوں کے لواحقین کو شکایت تھی کہ ہسپتال کا عملہ انہیں مریض کی صورتحال سے درست آگہی نہیں دیتا ہے۔ طبیعت زیادہ خراب ہونے پر انکو فوراً نشتر لیبر روم لے جانے کو کہا جاتا ہے۔ اگست کے مہینے میں فاطمہ جناح ہسپتال میں آپریشن کے ذریعے 217 بچوں کی پیدائش ہوئی ہے جبکہ 148 بچے نارمل ڈلیوری کے ذریعے پیدا ہوئے ہیں۔ اوسطاً روزانہ کی بنیاد پر 8 سے 12 سیزیرین ہو رہے ہیں۔ سنٹرل کمپلینٹ سسٹم صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کے حکم پر قائم کیا گیا ہے جہاں کوئی بھی شہری ہسپتال عملے کے خلاف شکایت کر سکتا ہے۔ سنٹرل کمپلینٹ سسٹم کا ٹال فری نمبر 0800-99000 ہے۔

مزیدخبریں