کراچی کو 9 ہزار ارب کی ضرورت ہے: وسیم اختر

Sep 12, 2018

کراچی (اسٹاف رپورٹر) میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ 12مئی کے واقع پر عدالتی کمیشن کا خیرمقدم کرتے ہیں ہم تو 13 مئی سے ہی یہ مطالبہ کر رہے تھے کہ عدالتی کمیشن بنایا جائے تاکہ اصل لوگ سامنے آ سکیں‘ کراچی کو 9 ارب نہیں 9 ہزار ارب کی ضرورت ہے‘ وزیراعظم کہہ چکے ہیں کہ کراچی ترقی کرے گا تو پاکستان ترقی کرے گا‘ 144 ترقیاتی اسکیمیں پچھلے سال وزیراعلیٰ سندھ کو دیں ایک بھی منظور نہیں کی گئی‘ امید ہے کہ اس بار سندھ حکومت ہماری دی گئی ترقیاتی اسکیموں کو نظر انداز نہیں کرے گی‘ چھوٹے اور بڑے ڈیم بننے چاہئیں‘ ہمیں پانی کی شدید ضرورت ہے‘ امید ہے وزیراعظم پروگرام کے مطابق مقررہ تاریخ کو کراچی کا دورہ کریں گے‘ مسائل کے حل کیلئے جدوجہد جاری رکھیں گے‘ قائداعظم کے ویژن اور عظیم جدوجہد کو بھلا نہیں سکتے یہ بات انہوں نے بابائے قوم قائداعظم محمد علی جناح کی 70 ویں برسی کے موقع پر مزار پر حاضری‘ فاتحہ خوانی اور کراچی کے شہریوں کی جانب سے مزار پر پھول چڑھانے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہی اس موقع پر میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن‘ بلدیہ غربی کے چیئرمین اظہار احمد حان‘ بلدیہ وسطی کے چیئرمین ریحان ہاشمی‘ سٹی کونسل میں پارلیمانی لیڈر اسلم شاہ آفریدی‘ اراضیات کمیٹی کے چیئرمین ارشد حسن‘ مالیات کمیٹی کے چیئرمین ندیم ہدایت ہاشمی‘ چارجڈ پارکنگ کمیٹی کے چیئرمین محمد مرسلین‘ سینئر ڈائریکٹر کو آرڈینیشن مسعود عالم اور دیگر افسران بھی موجود تھے۔

مزیدخبریں