توقیر صادق معاملہ ادھورا نہیں چھوڑ سکتے‘ لوٹنے والوں کو چھوڑا تو روایت پڑ جائے گی : سپریم کورٹ

12 مارچ 2013
توقیر صادق معاملہ ادھورا نہیں چھوڑ سکتے‘ لوٹنے والوں کو چھوڑا تو روایت پڑ جائے گی : سپریم کورٹ

اسلام آباد (نمائندہ نوائے وقت) سپریم کورٹ میں مبینہ 82ارب کی کرپشن میں ملوث سابق چیئرمین اوگرا توقیر صادق سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، ملزم کی گرفتاری کے حوالے سے اقدامات اور فرار میں مدد فراہم کرنے والے افراد کے خلاف پیش رفت رپورٹ 10دن کے اندر عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے سماعت 25مارچ تک ملتوی کر دی۔ نیب کے پراسیکیوٹر، ایف آئی اے کے ڈائریکٹر لیگل اعظم خان نے بتایا ملزم کی پاکستان واپسی کے لئے کوشش کر رہے ہیں تاحال کامیابی نہیں مل رہی۔ یو اے ای کی طرف سے بھی مشکلات پیش آ رہی ہیں۔ معلومات کا تبادلہ ٹھیک سے نہیں ہو رہا۔ ڈی جی مڈل ایسٹ (پاکستانی) نے کہا کہ اس معاملے کو اعلیٰ سطح تک اٹھانے کی ضرورت ہے۔ جسٹس جواد نے کہا کہ توقیر صادق کے معاملے کو ادھورا نہیں چھوڑ سکتے، عدالت میں جو رپورٹس جمع کروائی گئی ہیں اس سے پتہ چلتا ہے کہ فارن آفس اور دبئی والا سفیر بھی اس کیس میں ملوث ہے، دس افراد کی داخل کردہ رپورٹس سے یہ بھی پتہ چلتا ہے کہ فرار میں کچھ لوگ ملوث ہیں ان کے خلاف ریفرنس دائر کرکے کیا کارروائی کی گئی؟ اگر قومی دولت لوٹنے والے ملزمان کو یوں چھوڑا گیا تو یہ ریت پڑ جائے گی ، عدالت نے حکم دیا کہ نیب اور ایف آئی اے فارن آفس کے ساتھ مل کر کام کریں اور ہونے والی پیش رفت رپورٹ دس دن میں عدالت میں جمع کروائیں۔