الیکشن کے دوران کچھ ہوا تو ذمہ دار پنجاب حکومت ہو گی: رحمن ملک

12 مارچ 2013
الیکشن کے دوران کچھ ہوا تو ذمہ دار پنجاب حکومت ہو گی: رحمن ملک

اسلام آباد (نوائے وقت نیوز + آئی این پی) وزیر داخلہ رحمن ملک نے کہا ہے کہ پنجاب حکومت لشکر جھنگوی کے خلاف کارروائی نہیں کر رہی، الیکشن کے دوران کچھ ہوا تو ذمہ دار پنجاب حکومت ہو گی۔ صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایک بار پھر ملک میں بڑھتی ہوئی دہشت گردی کی روک تھام کے لئے پنجاب حکومت لشکر جھنگوی کےخلاف کارروائی نہیں کر رہی ہے۔ پنجاب کے وزیر اعلیٰ میاں شہباز شریف اپنے ذاتی مفادات کو چھوڑ کر لشکر جھنگوی کے خلاف فوری کارروائی کریں۔ فاٹا، رحیم یار خان اور میرانشاہ پنجابی طالبان کے گڑھ ہیں۔ تحریک طالبان اور لشکر جھنگوی الیکشن کا انعقاد نہیں چاہتے۔ رحمن ملک نے کہا کہ افغانستان میں موجود مولوی فقیر پاکستانیوں کا قاتل ہے۔ افغان حکومت اگر پاکستان کی خیرخواہ ہے تو مولوی فقیر محمد کو فوری پاکستان کے حوالے کیا جائے۔ تاریخ میں بیڈ گورننس کا سب سے بڑا ثبوت بادامی باغ واقعہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گرد افغانستان سے آ کر پاکستان میں حالات خراب کر رہے ہیں، گلگت بلتستان میں فرقہ واریت پھیلائی جا رہی ہے۔ دریں اثناءوفاقی وزیر داخلہ رحمن ملک نے عوامی احتجاج کے بعد زیر التوا چلاس پاسپورٹ آفس کا افتتاح کر دیا۔ ان کے ہمراہ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان سید مہدی شاہ بھی تھے۔ رحمن ملک نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نمبر پالیسی کی منظور ہو چکی ہے۔ دیامر میں یونیورسٹی کیمپس بنایا جائے گا۔ چلاس میں ایئرپورٹ اور ہیلی کاپٹر سروس شروع کی جائے گی ۔