کرزئی کو انجام نظر آ رہا ہے‘ امریکیوں کیخلاف بول رہے ہیں: دفاعی تجزیہ نگار

12 مارچ 2013

لاہور (خبرنگار) معروف دفاعی تبصرہ نگار ، ملٹری انٹیلی جنس پنجاب کے سابق سربراہ بریگیڈئر (ر) محمد یوسف نے کہا ہے کہ کرزئی کو اپنا انجام صاف نظر آ رہا ہے۔ اس لئے کرزئی اب اپنے امریکی آقاﺅں کے خلاف بھی بولنا شروع ہو گئے ہیں مگر اس امریکی پٹھو کو اب کچھ نہیں ملنے والا۔ نوائے وقت سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ اب حامد کرزئی کی امریکہ کو مزید ضرورت نہیں رہی۔ کرزئی کے پاس نہ پاور ہے نہ فوج۔ امریکی مہرے کی حیثیت سے حکومت چلا رہے ہیں۔ امریکی جس کے خلاف جو کہلانا چاہتے ہیں وہ کرزئی کہتے رہے ہیں مگر اب جب گیارہ سالہ جنگ کے بعد امریکی افغانستان سے نکل رہے ہیں تو انہیں اچھی طرح علم ہے کہ مستقل میں اگر انہوں نے افغانستان میں ”موجودگی“ رکھنا ہے تو طالبان سے رابطہ رکھنا ہو گا اور اس کی ”خوشنودی“ درکار ہو گی۔ لہٰذا حکومت جو ہمیشہ اپنے مفادات کا خیال رکھنے میں اب کرزئی کو بھول کر طالبان سے رابطے میں ہیں اور کرزئی کو بھی اپنا انجام نظر آ رہا ہے امریکہ اپنے مفادات کیلئے کسی بھی حد تک جا سکتا ہے ۔ اس نے پہلے بدترین بمباری کرکے افغانیوں کو تہہ تیغ کیا اور جب گیارہ برس میں بھی ”فتح“ نہ کر سکا تو اب کام نکالنے کیلئے مذاکرات کر رہا ہے یہی دیکھ کر کرزئی کو اپنے بُرے انجام سے خوف آنے لگا ہے ۔