رواں سال کی آخری سہ ماہی معیشت کےلئے انتہائی دشوار ثابت ہوگی: ماہرین

12 مارچ 2013

کراچی (اے پی اے) معاشی ماہرین کاکہنا ہے کہ رواں مالی سال کی آخری سہہ ماہی معیشت کے لئے انتہائی دشوار ثابت ہوگی۔ اس دوران معاشی اور مالیاتی مسائل کئی گنا بڑھ جائیں گے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ حکومت کی جانب سے ضروری معاشی اقدامات اور پالیسیز کے فقدان کی وجہ سے معیشت کو گرتے ہوئے زرمبادلہ کے ذخائر ، تیزی سے بڑھتے حکومتی قرضے، ہدف سے زائد خسارے اور سب سے بڑھ کر توانائی کے بد ترین بحران کا سامنا ہے۔ ماہرین کے مطابق موجودہ مسائل میں نگران حکومت کو آئندہ مہینوں میں اہم معاشی فیصلے لینا ہوں گے جو کہ انتخابی سال ہونے کے باعث نہیں لئے جارہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ توازن ادائیگی کے بگاڑ، غیر ملکی انفلوز نہ ہونے اور بے لگام حکومتی قرضوں کی وجہ سے زرمبادلہ کے ذخائر مسلسل کمی سے تیرہ ارب چالیس کروڑ ڈالرز تک گر گئے ہیں جبکہ رواں مالی سال کے اختتام تک آئی ایم ایف کو مزید ایک ارب ڈالر قرضہ واپس کرنا ہے جس سے زرمبادلہ پر دباو¿ بڑھ جائے گا۔