اشتعال دلانے والے سزا بھگتیں گے :وزیر اعلیٰ تعمیراتی کام شروع کرنے پر شکرگزار ہیں: متاثرین

12 مارچ 2013

لاہور (خصوصی رپورٹر) وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی زیر صدارت ایوان وزیر اعلیٰ میں سانحہ بادامی باغ کے متاثرین کی بحالی اور واقعہ میں ملوث افراد کے خلاف کی جانے وا لی کارروائی پر پیش رفت کا جائزہ لینے کے لئے اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا۔ سیکرٹری تعمیرات و مواصلات نے متاثرہ مکانوں کی تعمیر اور پولیس حکام نے بادامی باغ کے واقعہ میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی سے آگاہ کیا۔ شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سانحہ بادامی باغ میں مسیحی بھائیوں پرکی جانے والی بربریت کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔ سانحہ بادامی باغ کے متاثرین کی مدد او ران کی بحالی ہمارا فرض ہے، کسی پر احسان نہیں۔ حکومت کی مدت پوری ہونے سے قبل متاثرین کی بحالی کا کام مکمل کر لیں گے ۔ وزیر اعلیٰ نے ہدایت کی کہ اس افسوسناک واقعہ میں ملوث تمام افراد اور مشتعل کرنے والے عناصر کو جلد سے جلد قانون کی گرفت میں لایا جائے۔ لوگوں کواشتعال دلانے والے بھی ضرور سزا بھگتیں گے ۔ متاثرہ شخص پرویز بھٹی نے کہا کہ شہباز شریف اور پنجاب حکومت نے جس طرح ہماری مدد کی ہے ہم اس پر تہہ دل سے آپ کے شکرگزار ہیں۔ دیگر متاثرین نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ آپ ہمارے لئے گھر بنا رہے ہیں ، مالی امداد کے چیک دے رہے ہیں ہم وزیر اعلیٰ پنجاب کے اس تعاون کو فراموش نہیں کر سکتے۔ انتظامیہ، پولیس اور مسلم لیگی کارکنان ہمارے ساتھ بھرپور تعاون کر رہے ہیں ۔ سیکرٹری تعمیرات و مواصلات نے بتایا کہ متاثرہ مکانوں کی بحالی کا کام تیزی سے جاری ہے، 92 متاثرہ یونٹس کی بحالی کا کام 21 ٹھیکیداروں کے سپرد کیا گیا ہے۔ علاوہ ازیں  جوزف کالونی کے مسیحی رہنما¶ں سہیل کھوکھر، اقبال مارشل، ریاض مسیح اور جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ مسیحی برادری بادامی باغ کے متاثرہ علاقے میں تعمیراتی کام فوری شروع کرنے اور امدادی چیک کی تقسیم پر وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف کے شکرگزار ہی۔ ہم افسوسناک واقعہ پر سیاست کرنے والوں کی مذمت کرتے ہیں ۔