جہانگیر ترین نے سپریم کورٹ میں اپنی نااہلی کے خلاف نظر ثانی درخواست دائر کردی

12 جنوری 2018 (12:54)

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جہانگیر ترین نے سپریم کورٹ میں اپنی نااہلی کے خلاف نظر ثانی درخواست دائر کردی. نظر ثانی درخواست کے ساتھ جہانگیر ترین نے بیان حلفی بھی جمع کرادیا. حلف نامے میں کہا گیا کہ کاغذات نامزدگی میں جان بوجھ کر اثاثے چھپانے کی کوشش نہیں کی‘ عدالت اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرے.ٹرسٹ کے قیام کا مقصد بچوں کو برطانیہ میں گھر کی فراہمی تھا۔جہانگیر ترین نے نااہلی کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں نظر ثانی اپیل دائر کردی۔ درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ کبھی بھی یہ نیت نہیں رہی کہ اثاثوںکو چھپایا جائے۔ عدالت اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرے جہانگیر ترین نے نظر ثانی درخواست کے ساتھ بیان حلفی بھی عدالت میں ج مع کرایا۔ حلف نامے میں جہانگیر ترین نے کہا کہ کاغذات نامزدگی میں جان بوجھ کر اثاثے چھپانے کی کوشش نہیں کی۔ ٹرسٹ کے قیام کا مقصد بچوں کو برطانیہ میں گھر کی فراہمی تھا۔ میرے چار بچے ہیں سب شادی شدہ اور خودمختار ہیں خود کو اور بیوی کو ٹرسٹ کا تاحیات بینی فشری بنانا صرف ایک حفاظتی اقدام تھا اس کو اثاثے چھپانے کے زمرے میں نہیں لیا جاسکتا۔ سپریم کورٹ نے جہانگیر ترین کو پندرہ دسمبر کو نااہل قرار دیا تھا۔