زائرین کا تحفظ ریاست کی زمہ داری ،تمام مشکلات دور کرینگے ، شہر یار آفریدی

Sep 11, 2018

اسلام آباد ( وقائع نگار خصوصی) وزیر مملکت برائے داخلہ شہر یار آفریدی نے کہا ہے کہ وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ناجائز تعمیرات اور قبضہ مافیا برداشت نہیں کی جائے گی ،ڈی12 میں 31پلازے گرائے گئے ،ایک ایک مارکیٹ 24 کنال پر مشتمل تھی،کوشش کریںگے کسی کے ساتھ زیادتی نہ ہو بلوچستان کی احساس محرومی ختم ہوگی ،بلوچستان کے کونے کونے میںجائوں گا ۔گزشتہ روزبلوچستان ہا ئو س میں وزیر اعلی بلوچستان جام کمال کے ہمراہ صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا بلوچستان میں محرم الحرام میں جو زائرین ایران جاتے ہیں ان کے ساتھ مشکلات پیش آتی ہیں،تحریک انصاف حکومت اور وزیراعظم عمران خان نے اس مسئلے پر توجہ دی،ہم بھی بلوچستان میں تبدیلی لائیں گے،بلوچستان حکومت کی وفاق کے ساتھ مکمل تعاون جاری رہے گا،اگر ان کے کوئی تحفظات ہیں تو ہم دور کریں گے،زائرین کے لیے ٹرین کی بجائے بس ذیادہ محفوظ ہے،ٹرین اپنے ٹریک پر تیز نہیں چل سکتی نہ ہی یہ محفوظ ہے۔ وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار خان آفریدی نے کہا وزیراعظم نے پیغام دے دیا کہ ریاست پاکستان پر پوری توجہ ہے،تمام سٹیک ہولڈرز پاکستان کی اکائیوں کو اپنا سمجھیں،"پاکستان فرسٹ" ہماری اولین ترجیح ہے،زائرین کو سہولیات فراہم کرنا ہماری ذمے داری ہے،ہم تمام صوبوں کو برابر سمجھتے ہیں،بلوچستان کی احساس محرومی کے باعث وہاں کے لوگ اسلحہ اٹھانے پر مجبور ہے،اب بلوچستان کی احساس محرومی ختم ہوگی،شہریار آفریدی نے کہا زائرین کے جان ومال کا تحفظ ہماری اولین ترجیح ہے۔وزیراعظم سیکرٹریٹ اور وزارت داخلہ براہ راست مانیٹرنگ کررہے ہیں،دیکھنا ہوگا یہ تعمیرات کیسی ہوئیں،محرام الحرام میں سیکورٹی کے لیے ہائی لیول میٹنگس جاری ہیں،میں پاکستان کے ہر کونے میں جاو ں گا۔ڈپٹی اسپیکر بلوچستان اسمبلی قاسم خان سوری نے کہا زائرین پر متعدد بار حملے ہو چکے ہیں ،میں بھی اپنا مثبت کردار ادا کروں گا،امید ہے موجودہ بلوچستان حکومت اپنا کام احسن طریقے سے ادا کرے گی۔

مزیدخبریں