مولانا فضل الرحمن کے بھائی کمشنر افغان مہاجرین ضیاء الرحمن کو ہٹادیاگیا

Sep 11, 2018

پشاور(بیورورپورٹ)وفاقی حکومت نے خیبرپختونخوا میں کمشنر برائے افغان مہاجرین ضیاء الرحمن کو عہدے سے ہٹاکر اُن کے خلاف تحقیقات کی منظوری دے دی ۔کمشنر افغان مہاجرین ضیا الرحمن جمعیت علماء اسلام (ف )کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کے چھوٹے بھائی ہیں۔وفاقی حکومت نے کمشنر افغان مہاجرین خیبرپختونخوا کے خلاف تحقیقات کرنے اور انہیں ہٹانے کی منظوری دے دی۔ذرائع کے مطابق جمعیت علماء اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کے چھوٹے بھائی اور کمشنر افغان مہاجرین ضیاء الرحمن کو عہدے سے ہٹانے اور انکے خلاف تحقیقات کی منظور وفاقی کابینہ نے دے دی،وفاقی کابینہ نے وزیراعظم کے مشیر اسٹیبلشمنٹ ارباب شہزاد کو اس ضمن میں تحقیقاتی رپورٹ تیار کرنے کی ہدایت کی ۔ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ نے ہدایت کی ہے کہ کمشنر افغان مہاجرین ضیاء الرحمن کیسے بڑے عہدوں پر فائز ہوئے اور ان کو صوبائی مینجمنٹ سروس میں کیوں اور کیسے شامل کیا گیااسکی تحقیقات کی جائے ۔واضح رہے کہ ضیا ء الرحمن پر الزام ہے کہ انہوں نے کمشنر افغان مہاجرین کا عہدہ سیاسی اثرورسوخ استعمال کرکے حاصل کیا اور گزشتہ کئی سالوں سے اس عہدے پر براجماں ہیں۔میڈیا رپوٹس کے مطابق ضیا الرحمان بنیادی طور پر وفاقی ادارے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن کے ملازم تھے اور ڈویژنل انجینئر کے عہدے پر فائز تھے لیکن 2007میں ایم ایم اے کی صوبائی حکومت کے دوران سابق وزیر اعلی اکرم خان درانی نے ضیا الرحمن کو پراونشل مینجمنٹ سروسز میں شامل کیا اور انکو اسسٹنٹ کمشنر افغان مہاجرین تعینات کیا۔بعد ازاں وہ کچھ عرصہ کے لئے ڈپٹی کمشنر خوشاب بھی رہے لیکن 2012میں دوبارہ انہیں کمشنر افغان مہاجرین پشاور تعینات کیا گیا۔

مزیدخبریں