پی کے 23 شانگلہ میں دوبارہ پولنگ، تحریک انصاف کے شوکت یوسفزئی کامیاب

Sep 11, 2018

الپوری(آفتاب حسین) الیکشن کمیشن کے حکم پر خیبر پختونخوا اسمبلی کے حلقہ ’پی کے 23‘ شانگلہ میں دوبارہ ہونے والی پولنگ میں تحریک انصاف کے امیدوار شوکت یوسف زئی نے 20 ہزار ووٹوں کی برتری سے کامیابی حاصل کرلی۔ شانگلہ میں تمام 135 پولنگ اسٹیشنز میں ووٹوں کی گنتی مکمل کر لی گئی اور غیر سرکاری ، غیرحتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف ،پیپلز پارٹی ، حاجی سید فرین گروپ کے اتحادی امیدوار شوکت علی یوسفزئی 42 ہزار 116 ووٹ لے کر کامیاب ہوگئے اور انہوں نے تقریباً 20 ہزار ووٹوں کی برتری حاصل کی۔ ان کے مدمقابل مسلم لیگ (ن) کے امیدوار محمد ر شاد خان 22 ہزار 315 ووٹ کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے۔خیبر پختونخوا اسمبلی کے ضلع شانگلہ میں دوبارہ الیکشن کے لیے پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوئی جو شام 6 بجے تک جاری رہی۔ اس موقع پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے جبکہ پاک فوج کے جوان بھی تعینات تھے۔حلقے میں مجموعی طور پر رجسٹرڈ ووٹرز کی تعداد2 لاکھ 555 ہے جن میں مرد ووٹرز کی تعداد 1 لاکھ 13 ہزار 827 اور خواتین کی تعداد 86 ہزار 728 ہے۔ حلقے کی کئی یونین کونسلز میں خواتین نے پہلی بار ووٹ کاسٹ کیا۔یاد رہے کہ الیکشن کمیشن نے 25 جولائی کو عام انتخابات میں خواتین کے ووٹوں کی شرح بہت کم ہونے پر شانگلہ میں دوبارہ پولنگ کا حکم دیا تھا۔ الیکشن میں پی ٹی آئی کے شوکت یوسفزئی نے 17399 ووٹ لے کر کامیابی حاصل کی تھی، جبکہ (ن) لیگ کے رشاد خان 15 ہزار 533 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے تھے۔اس حلقے میں خواتین رائے دہندگان کی تعداد 86 ہزار ہے لیکن 25 جولائی کو صرف ساڑھے 3 ہزار خواتین نے ووٹ ڈالے تھے۔ الیکشن کمیشن کے قوانین کے مطابق خواتین کا ٹرن آؤٹ 10 فیصد ہونا ضروری ہے۔

مزیدخبریں