پاکستان بھارت سے نیا تجارتی معاہدہ نہیں کررہا: خرم دستگیر

11 مارچ 2014
پاکستان بھارت سے نیا تجارتی معاہدہ نہیں کررہا: خرم دستگیر

اسلام آباد (عمران علی کنڈی/ دی نیشن رپورٹ) وفاقی وزیر تجارت و ٹیکسٹائل انجینئر خرم دستگیر خان کا کہنا ہے کہ پاکستان بھارت کے ساتھ کوئی نیا تجارتی معاہدہ کرنے نہیں جارہا اور نئی دہلی کو غیر امتیازی مارکیٹ رسائی اس وقت فراہم کی جائے گی جب وہ ٹیکسٹائل، سیمنٹ، سرجیکل آلات اور سپورٹس جیسی مرکزی برآمد کی جانے والی اشیاء کے حوالے سے آسانی پیدا نہیں کرے گا۔ انہوں نے ’’دی نیشن‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی حکومت نے ہماری برآمدی اشیاء کو حساس اشیاء کی فہرست میں شامل کرکے ان پر بھاری ڈیوٹی عائد کردی ہے جس کی وجہ سے ہمارے ایکسپورٹرز اپنی اشیاء بھارت کو فروخت نہیں کرپاتے۔ انہوں نے کہا اب تک غیر امتیازی مارکیٹ رسائی کے لئے کوئی ٹائم فریم نہیں دیا گیا۔ پاکستان بھارت کو کوئی بھی سٹیٹس دینے سے پہلے اپنے تحفظات دور کرے گا۔ اس حوالے سے موجودہ بھارتی حکومت نے حساس اشیاء کی فہرست میں تبدیلی نہیں کی تو آئندہ حکومت کے سامنے تحفظات پیش کئے جائینگے۔ بھارت کو غیر امتیازی مارکیٹ رسائی کا درجہ دینے کے بعد پاکستان بھارت کی 1209 اشیاء کو منفی اشیاء کی فہرست سے نکال دے گا۔