سپریم کورٹ نے خاتون پائلٹ کو جنسی ہراساں کرنے پر حکومت اور پی آئی اے سے وضاحت مانگ لی

11 مارچ 2014

اسلام آباد(ثناء نیوز) ایک خاتون پائلٹ کو مبینہ طور پر جنسی ہراساں کئے جانے پر سپریم کورٹ نے پیر کو حکومت اور قومی ایئر لائن سے وضاحت طلب کرلی۔ 1990ء پی آئی اے میں شمولیت اختیار کرنے والی کیپٹن رفعت حئی نے عدالت میں داخل ایک درخواست میں کہا ہے کہ انہیں اپنے کریئر کے ابتدائی ایام میں ہراساں کیا گیا۔ ایئر لائن انتظامیہ کی طرف سے کوئی کارروائی نہ کرنے پر رفعت نے قومی اسمبلی کی کمیٹی برائے ویمن ڈویلپمنٹ سے رجوع کیا، جن کی تحقیقات سے معلوم ہو ان کہ رفعت اور دیگر خاتون ملازمین کو دو سینئرز نے ہراساں کیا۔ ان کے وکیل جاوید حسن کے مطابق مارچ 2010ء میں کمیٹی نے ان افراد کے خلاف سخت تادیبی کارروائی کا حکم دیا تھا تاہم حکام اس پر عمل کرنے سے بچتے رہے۔ ان کا بتایا کہ ہائی کورٹ نے بھی رفعت کے حق میں فیصلہ سنا رکھا ہے تاہم پی آئی اے کی انتظامیہ کوئی کارروائی کرنے پر تیار نہیں۔