عسکری و سیاسی کوششوں سے بلوچستان ترقی کر سکتا ہے‘ تشدد ترک کرنیوالوں کو سپورٹ کرینگے: جنرل راحیل

11 جولائی 2015

کوئٹہ (نوائے وقت رپورٹ) جنرل راحیل شریف نے گزشتہ روز کوئٹہ کا دورہ کیا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف کو بلوچستان کی سکیورٹی صورتحال پر بریفنگ دی گئی۔ آرمی چیف کو بتایا گیا کہ بلوچستان میں امن و امان کی مجموعی صورتحال بہتر ہوئی ہے، ایف سی اور پولیس آپریشنز سے جرائم کم ہوئے۔ مؤثر کارروائیوں کے نتیجے میں فرقہ وارانہ تشدد میں کمی آئی۔ بریفنگ میں ڈی جی آئی ایس آئی اور آئی جی ایف سی نے بھی شرکت کی۔ آرمی چیف نے بلوچستان میں امن و امان کی بہتر صورتحال پر قانون نافذ کرنے والے اداروں کو خراج تحسین پیش کیا۔ آرمی چیف نے ایف ڈبلیو او کے روڈ نیٹ ورک کو بہتر بنانے کی کوششوں کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ عسکری و سیاسی قیادت کی کوششوں سے بلوچستان ترقی کی راہ پر گامزن ہوسکتا ہے۔ آرمی چیف نے ہدایت کی کہ تمام سڑکوں کو بروقت مکمل کیا جائے۔ بلوچستان توانائی اور تجارت کا علاقائی مرکز بننے کی اہلیت رکھتا ہے۔ آرمی چیف نے کہا کہ ایف سی پولیس کی ٹارگٹڈ کارروائیوں سے صوبے میں امن و امان کی صورتحال بہتر ہوئی ہے۔ امن، ترقی، خوشحالی کے حصول کیلئے فوج بلوچستان حکومت اور عوام کے ساتھ ہے۔ توانائی اور تجارت سے متعلق بلوچستان ایک ریجنل حب کی حیثیت رکھتا ہے۔ آرمی چیف نے تشدد کا راستہ چھوڑنے اور ہتھیار پھینکنے والوں کا خیرمقدم کیا۔ آرمی چیف نے کہا کہ تشدد کا راستہ ترک کرکے قومی دھارے میں آنے والوں کو مکمل سپورٹ کریں گے۔