نوازشریف مودی ملاقات کے اعلامیہ کا متن

11 جولائی 2015

اسلام آباد (اے پی پی) وزیراعظم محمد نوازشریف اور بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے درمیان اوفا (روس) میں شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) کے موقع پر ملاقات کے بعد پاکستان اور بھارت کے خارجہ سیکرٹریوں نے 5نکاتی مشترکہ بیان دیا گیا۔ جس کا متن اس طرح ہے۔ ’’پاکستان اور بھارت کے وزرائے اعظم نے اوفا میں ایس سی او سمٹ کے موقع پر ملاقات کی۔ ملاقات خوشگوار ماحول میں ہوئی، دونوں رہنمائوں نے دوطرفہ اور علاقائی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ انہوں نے اتفاق کیا کہ بھارت اور پاکستان پر امن کو یقینی بنانے اور ترقی کے فروغ کے لئے اجتماعی ذمہ داری عائد ہوتی ہے اس ضمن میں وہ تمام تصفیہ طلب مسائل پر بات چیت کے لئے تیار ہیں۔ دونوں رہنمائوں نے ہر قسم کی دہشت گردی کی مذمت کی اور جنوبی ایشیا سے اس لعنت کے خاتمے کے لئے ایک دوسرے سے تعاون کرنے پر اتفاق کیا۔ انہوں نے دونوں اطراف کی جانب سے ان اقدامات پر بھی اتفاق کیا۔ -1 دہشت گردی سے متعلقہ تمام ایشوز پر بات چیت کے لئے دونوں قومی سلامتی مشیروں (این ایس ایز) کے درمیان نئی دہلی میں ملاقات ہو گی۔ -2 ڈی جی بی ایس آف اور ڈی جی پاکستان رینجرز اور اس کے بعد ڈی جی ایم اوز کی جلد ملاقاتیں ہونگی۔ -3 ایک دوسرے کی تحویل میں ماہی گیروں کی ان کی کشتیوں کے ساتھ 15 روز کے عرصہ میں رہائی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ -4مذہبی سیاحت میں سہولت کے لئے طریقہ کار طے کیا جائیگا۔ -5 دونوں اطراف نے آواز کے نمونوں کی فراہمی جیسی اضافی معلومات سمیت ممبئی کیس کے ٹرائل کو تیز کرنے کے طریقوں پر بات چیت کے لئے اتفاق کیا۔ وزیراعظم نواز شریف نے 2016ء میں سارک سربراہ اجلاس کے لئے وزیراعظم نریندر مودی کو پاکستان کے دورہ کی دعوت کا اعادہ کیا۔ وزیراعظم مودی نے دعوت قبول کرلی۔‘‘