حکومت بجلی بحران کے خاتمے کیلئے اقدامات مزید موثر، منصوبے بروقت مکمل کرے: قائمہ کمیٹی

11 جولائی 2015

اسلام آباد ( آئی این پی ) سینٹ کی قائمہ کمیٹی برائے پانی و بجلی نے ملک سے بجلی کے بحران کے خاتمہ کےلئے حکومتی اقدامات کو مزید موثر بنانے اور منصوبہ بروقت مکمل کرنے کی ہدایت کی جبکہ کمیٹی نے اجلاس میں وفاقی وزیر اور سیکرٹری پانی وبجلی کی غیر حاضری پر برہمی کا اظہار کیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کمیٹی کا اجلاس چیئرمین اقبال ظفر جھگڑا کی زیرصدارت ہوا۔ وزارت پانی وبجلی کے ایڈیشنل سیکرٹری عمر رسول نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ بجلی کی پیداوار اس وقت 17 ہزار میگا واٹ ہے اور طلب 22 ہزار میگا واٹ ہے اور وزیراعظم کی ہدایت پر کم سے کم لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے ۔ بجلی کے نئے منصوبوں پر تیزی سے کام جاری ہے اور کئی علاقوں میں موسم کی خرابی کی وجہ سے ٹرانسفارمر جلنے کی وجہ سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ اس کے علاوہ بجلی کی چوری روکنے کےلئے بھی موثر اقدامات کئے گئے ہیں ، کمیٹی کے اجلاس میں ارکان کی طرف سے وفاقی وزیر اور سیکرٹری پانی وبجلی کی عدم شرکت پر برہمی کا اظہار کیا گیا ، تحریک انصاف کے نعمان وزیر خٹک نے کہا کہ کمیٹی اجلاسوں میں صرف باتیں ہوتی ہیں ، اصل مسئلہ عوام کی مشکلات کا ازالہ ہے ، اس کےلئے سنجیدگی سے کام کرنے کی ضرورت ہے اور حکومت سنجیدہ نظر نہیں آرہی۔ داﺅد اچکزئی نے کہا کہ وفاقی وزیر کو اپنے تمام کام چھوڑ کر کمیٹی کو اہمیت دینی چاہئے تھی۔ جے یو آئی کے مولانا عطاءالرحمن نے کہا کہ ہم یہاں وقت ضائع کرنے آتے ہیں ، اگر وفاقی وزیر نہیں آسکتے تو ہمیں بتا دیتے۔
قائمہ کمیٹی