ملاقات سے امن قائم کرنے میں مدد ملے گی، کشیدگی ہمیشہ بھارت نے شروع کی: مشاہد اللہ

11 جولائی 2015

اسلام آباد +مریدکے (ایجنسیاں+نامہ نگار) وفاقی وزیر موسمیاتی تغیرات مشاہد اﷲ خان نے کہا ہے کہ نواز شریف اور نریندر مودی کی ملاقات سے خطے میں امن قائم کرنے میں مدد ملے گی‘ پاکستان مسئلہ کشمیر سے کبھی دستبردار نہیں ہو گا‘ ملاقات دونوں ممالک کے مابین اہم سنگ میل ثابت ہوسکتی ہے۔ میڈیا سے گفتگو میں انہوں نے کہا کہ ڈی جے بٹ اور ٹینٹ سروس والوں کو پیسے دینے چاہئیں۔ عمران غیر سنجیدہ ہیں کسی چیز کا علم نہیںہے۔ وزیراعظم نواز شریف اور مودی ملاقات کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ خطے میں امن کیلئے دونوں ممالک کو مل بیٹھ کر گفت و شنید سے مسائل حل کرنے ہوں گے لیکن بھارت کا موقف دنیا کے سامنے ہے۔ کشیدگی ہمیشہ بھارت کی جانب سے شروع کی گئی جبکہ وزراءخارجہ کے درمیان مذاکرات بھی بھارت کی جانب سے ختم کئے گئے۔ پاکستان ہمیشہ بات چیت پر یقین رکھتا ہے۔ جمہوری انداز میں مسائل کا حل چاہتا ہے ۔ دونوں ملکوں کے سربراہوں کی ملاقات خطے میں امن کیلئے اہم سنگ میل ثابت ہوگی۔ گورنر گلگت بلتستان و امور کشمیر پاکستان برجیس طاہر نے کہا ہے کہ نواز شریف مودی ملاقات بھارتی وزیراعظم کی خواہش پر ہوئی ۔ گلگت بلتستان کا الیکشن مسلم لیگ (ن) نے دو تہائی اکثریت سے جیتا ہے۔ بھارت کی نیت صاف ہوئی تو مذاکرات آگے ب©ڑھ سکتے ہیں۔ جب تک مسئلہ کشمیر پر بات نہیں ہو گی پاکستان اور بھارت کے تعلقات بہتر نہیں ہو سکتے۔ پاکستان نے ہمیشہ سے امن کے معاملے میں بھرپور کردار ادا کیا ہے لیکن بھارت نے ہمیشہ سے اپنا برتاﺅ ٹھیک نہیں رکھا ۔ پاکستان میں را کی مداخلت کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔وفاقی وزیر دفاعی پیداوار و سائنس و ٹیکنالوجی رانا تنویر حسین نے کہا ہے کہ ہم بھارت سے مذاکرات میں سنجیدہ ہیں۔ بھارت اگر مثبت جواب نہیں دیتا تو ہم بھی کمزور نہیں جبکہ ایٹمی قوت ہیں۔ بھارت محض لکھوی کیس پر ڈھنڈورہ پیٹ رہا ہے جبکہ ہمارے پاس بلوچستان، کراچی اور وزیرستان میں بھارتی دہشت گردی کے ثبوت ہیں۔ چین ہمارا خطے میں مخلص دوست ہے۔ افغان طالبان اور افغان حکومت میں مذاکرات بڑا بریک تھرو ہے انشاءاللہ کامیاب ہوں گے۔ شریف برادران کا میڈیا ٹرائل کرنے والے خود خیبر پی کے میں کرپشن کے مجرم نکلے۔ اس امر کا اظہار رانا تنویر حسین نے جمعہ کی شام لیگی کارکنان کے اعزاز میں افطار ڈنر سے خطاب کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کیا۔ اس موقع پر ملک عارف، رانا حسیب عامر و دیگر بھی موجود تھے۔
رانا تنویر

مشاہد اللہ