پاکستان میں بننے والی ادویات عالمی معیار کے مطابق نہیں: عالمی ادارہ صحت

11 جولائی 2015

اسلام آباد (آن لائن) عالمی ادارہ صحت نے پاکستان کی بنائی ہوئی ادویات کو غیر تسلی بخش قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان میں بننے والی ادویات عالمی معیار کے مطابق نہیں ہیں۔ دوسری جانب فیڈرل ڈرگ سرویلنس لیبارٹری تاحال بحال نہیں ہو سکی جس کی وجہ سے مختلف امراض کےلئے ادویات کے معیار کو پرکھنے کےلئے کوئی ادارہ موجود نہیں اور عالمی ادارہ صحت نے تاحال پاکستان ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کو تسلیم نہیں کیا۔ ڈبلیو ایچ او نے کہا کہ پاکستانی کمپنیاں ترقی یافتہ ممالک کو ادویات برآمد کرنے کے قابل نہیں ہیں۔ ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان ادویات کے معیار اور نگرانی کرنے کی ذمہ دار ہے۔ ایک بڑا مسئلہ یہ ہے کہ فیڈرل ڈرگ سرویلنس لیبارٹری جو کہ ادویات کے معیار کو پرکھنے کےلئے بہت اہمیت رکھتی ہے تاحال بحال نہ ہو سکا۔
عالمی ادارہ صحت